-،-جہیزکا لین دین اسلام و شریعت کے برخلاف ہے ‘ آئی ایم ایس او-،-
کراچی ( اسٹاف رپورٹر) اصلاح میمن سماج آرگنائزیشن کے چیئرمین فرزند جونا گڑھ اقبال چاند ‘ جنرل سیکریٹری نور محمد وارثی ‘ جوائنٹ سیکریٹری عبدالغفار اپلیٹا والا ‘ اسلم ترک اور لیگل ایڈوائزر وماہر قانون الطاف حسین ایڈوکیٹ نے معاشرے میں موجود جہیز اور میمن سماج میں قائم گھر سامان کی فرسودہ ‘ قبیح اور غیر انسانی رسم و رواج کیخلاف میڈیا کانفرنس کرتے ہوئے صدر آل پاکستان میمن فیڈریشن عبدالعزیز میمن ‘ میمن سماجی رہنما حاجی حنیف طیب‘ سیاسی ‘سماجی و مذہبی رہنما محمد حسین محنتی ‘ جونا گڑھ اسٹیٹ مسلم فیڈریشن کے صدر اقبال ساندھ ‘ سیکریٹری عبدالعزیز عرب اور نواب آف جونا گڑھ نواب جہانگیر خانجی سے میمن سماج کی تباہی کا باعث بننے والی جہیز و گھر سامان کی فرسودہ روایات ‘ مہندی ‘ مایوں ‘ ابٹن ‘ ہلدی جیسی فرسودہ رسومات کے خاتمے اور شادی بیاہ میں انواع و اقسام کھانوں کی بجائے ون ڈش کی پابندی کرانے کیلئے کردار کی ادائیگی کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ جہیز کی لعنت نے جہاں معاشرے کی دھجیاں بکھیر کر غریب کو بیٹی کی شادی کے فریضے کی ادائیگی سے محروم کردیا ہے وہیں میمن سماج کی گھر سامان کے نام پر قائم غیر شرعی روایت نے میمن سماج کے بخیے بھی ادھیڑ کر رکھ دیئے ہیں اور10فیصد کمیشن کے حصول کیلئے گھر سامان کے نام پر شادی جیسے مقدس بندھن کو کاروباربناکر غریب کی بیٹیوں کوشادی سے محروم کرکے بوڑھا کرنے والے بروکروں کا احتساب اورجہیز و گھر سامان کی غیر شرعی ‘ فرسودہ ‘ قبیح اورمساوات سے متصادم رسم و رواج کا خاتمہ نہیں کیا گیا تو تباہی سے دوچار میمن سماج مکمل طور پربرباد اور اخلاق باختگی سے دوچار ہوجائیگا!