-،-عوام کی محنت کی کمائی کھانے والاحاکم نہیں خادم ہوتا ہے ‘ جی کیو ایم -،-
کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) سندھ حکومت کی جانب سے صوبائی وزرأ اور اراکین صوبائی اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافے کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے گجراتی قومی موومنٹ کے سربراہ گجراتی سرکار امیر سولنگی عرف پٹی والا المعروف سورٹھ ویر نے کہا ہے کہ عوام کے ووٹوں سے منتخب ہوکر ایوان و اسمبلی میں پہنچنے والے عوامی نمائندے و ترجمان ہوتے ہیں مگر جب ترجمان و نمائندے عوام کے خون پسینے کی کمائی سے تنخواہیں اور مراعات حاصل کرنے لگتے ہیں تو پھران پر عوام کی ترجمانی و نمائندے کا ہی نہیں بلکہ عوام کی خدمت اور ان کے مسائل کے حل کا فریضہ بھی عائد ہوجاتا ہے اور ادب ‘ تہذیب ‘ تاریخ اور تمیز یہ بتاتی ہے کہ خدمت کا فریضہ جس پر عائد ہو وہ خادم ہوتا ہے اسلئے جو خدمت کی جتنی بڑی تنخواہ لے گا اور جتنی زیادہ مراعات حاصل کریگا اس پراتنی ہی ذمہ داری عائد ہوگی اسلئے ہمیں وزراء ‘ مشیران اور اراکین اسمبلی کی تنخواہوں میں اضافے پر کوئی اعتراض نہیں لیکن ہم یہ چاہتے ہیں کہ عوامی سرمائے پر پلنے والے یہ سفید ہاتھی اپنی ذمہ داریاں اور فرائض پورے کرتے ہوئے عوام پر حکومت کی بجائے ان کی خدمت کریں اور عوام کی خون پیسنے کی کمائی سے حاصل ہونے والی تنخواہوں کو حلال کرتے ہوئے عوام کو مسائل و مصائب سے نجات دلانے کیلئے ذمہ دارانہ کردار ادا کریں اور عوام پر حاکمیت کا دھونس جمانے و رعب جھاڑنے کی بجائے یہ بات یاد رکھیں کہ عوام کی محنت پر پلنے والے تنخواہ کی وصولی کے بعد حاکم نہیں صرف خادم ہوتے ہیں ۔