-،-استحصالی طبقات مہنگائی کی قبر میں عوام کو زندہ دفنارہے ہیں‘ ایم آر پی-،-
کراچی ( اسٹاف رپورٹر)محب وطن روشن پاکستان پارٹی کے قائد و چیئرمین امیر پٹی نے کہا ہے کہ آئین پاکستان حکمرانی کیلئے صادق و امین ہونے کی جو شرط عائد کرتا ہے اس کی وجہ یہ ہے کہ حکمران اگر صادق و امین اور ملک و قوم سے مخلص نہیں ہوگا تو قومی وسائل کو ذاتی و گروہی مفادات کیلئے استعمال کرے گا جس سے ملک کمزور اور عوام بدحالی ‘ مسائل اور مصائب کا شکار ہوں گے اور بد قسمتی سے آج پاکستان کمزور اور عدم استحکام سے دوچار اور عوام بد حالی ‘ مسائل ‘ مصائب ‘ غربت ‘ مایوسی اور احساس عدم تحفظ سے بھی دوچار ہیں جبکہ پانامہ کیس میں جن کی صداقت و امانت مشکوک ہوچکی ہے ان کا قومی بجٹ بنانا ملک و قوم کے مزید بدحال مستقبل کی گواہی دے رہا ہے اور اس تمام تباہی ‘ بدحالی اور خرابی کا ذمہ دار الیکشن کمیشن ہے جس نے ہر انتخاب میں آئین کی شق62و 63کو نظر انداز کرکے چوروں ‘ لٹیروں ‘ عوام دشمنوں اور کرپٹ عناصر کو انتخاب لڑنے کی اجازت دی یا پھر انصاف کے ذمہ دار وہ ادارے ہیں جنہوں نے اسلام کے اصول مساوات کو نظر انداز کرکے ہمیشہ جانبدارانہ انصاف کیا اور آج بھی پانامہ کیس ملزمان کو بجٹ سازی کا ختیار دیکر انہیں پھر سے ذاتی ‘ گروہی اور طبقاتی مفادات کیلئے مہنگائی کی چھری سے عوام کو ذبح کرنے کا موقع فراہم کیا گیا ہے جبکہ ملک و قوم کی تباہی کی ذمہ داری ان پر بھی عائد ہوتی ہے جو فوج کیخلاف سازشیں کرنے والوں کی ہر خطا کو معاف کرکے بار بارانہیں گلے لگا رہے ہیں اور وہ بھی قومی و عوامی تباہی کے ذمہ دار ہیں جو شخصیت پرستی ‘ تعصب اور لسانیت میں اندھے ہوکر انہی چوروں اور لٹیروں کو بار بار اقتدار میں لارہے ہیں جو مہنگائی کی قبر میں عوام کو زندہ دفنارہے ہیں ۔