-،-کابینہ کا جے آئی ٹی رپورٹ مسترد کرنا شرمناک ہے ‘ ایم آر پی -،-
جے آئی ٹی رپورٹ وزیراعظم یا حکومت کیخلاف نہیں شریف خاندان کیخلاف ہے ‘ امیر پٹی
وفاقی کابینہ نے ثابت کردیا ہے ملک میں جمہوریت نہیں بلکہ خاندانی بادشاہت قائم ہے !

کراچی ( اسٹاف رپورٹر )محب وطن روشن پاکستان پارٹی کے قائد و چیئرمین امیر پٹی نے کہا ہے کہ پانامہ کیس میں سپریم کورٹ کی تشکیل کردہ جے آئی ٹی رپورٹ وزیراعظم یا حکومت کیخلاف نہیں بلکہ نوازشریف اور شریف فیملی کیخلاف ہے اور اس رپورٹ پر واویلہ مچانا ‘ اسے مسترد کرنا یا اسے سپریم کورٹ میں چیلنج کرتے ہوئے قانونی جنگ لڑنا نوازشریف اور ان کے خاندان کا بنیادی آئینی حق ہے مگر نوا زشریف کی جانب سے اپنے بچاؤ کیلئے وفاقی کابینہ کا استعمال افسوسناک ‘ شرمناک اور قابل مذمت ہے جبکہ وفاقی کابینہ کی جانب سے جے آئی ٹی رپورٹ کو مسترد کرنا اس بات کی علامت ہے ملک میں جمہوریت نہیں بلکہ بادشاہت قائم ہے اور عوام کے منتخب نمائندگان عوامی و قومی مفادات کے تحفظ کی بجائے شریف خاندان کے مفادات کے محافظ بن کر علی بابا کے چالیس چوروں کا کردار ادا کررہے ہیں جو ملک و قوم کے مستقبل کیلئے انتہائی خطرناک علامت اور اس بات کی متقاضی ہے کہ عدلیہ فوری طور اس کا نوٹس لیتے ہوئے وفاقی کابینہ کو تحلیل کرے اور قومی سرمائے سے وفاقی کابینہ کا اجلاس بلاکر اسے ذاتی مفادات کیلئے استعمال کرنے اور جے آئی ٹی رپورٹ مسترد کرنے والوں کو توہین عدالت کیساتھ اختیار واقتدار کے ناجائز استعمال کا بھی مقدمہ بنایا جائے اور پانامہ کیس میں حقیقی انصاف کرتے ہوئے ملک و قوم کو لوٹنے والے ہر فرد کو نشان عبرت بنانے کیساتھ عوام دشمنوں کا اقتدار تک پہنچنے کا ہر راستہ بھی بند کیاجائے گا ۔