۔،۔بسلسلہ ایصال ثواب ،والدہ (مرحومہ)علامہ شوکت  مدنی ،محفل ذکر و نعت کا اہتمام۔جاوید بھٹی-،-

bh

جاوید بھٹی
جاوید بھٹی شان پاکستان جرمنی سٹٹگارٹ۔ ایڈیاں گوڑیاں جگ تے چھاواں لبدیاں نہیں، ٹُر جانونڑ اک بار تے ماواں لبدیاں نہیں، سب سے قریبی رشتہ ماں اور باپ کا ہوتا ہے ،یہ سن لیجیئے یہ ایسا عظیم رشتہ ہے جس نے اس کو توڑ دیا ایسا ہے کہ اس نے جہنم کو خرید لیا ،بہت سے لوگ ماں کا مقام نہیں جانتے ، روح زمین پر اگر سب سے زیادہ اللہ اور اللہ کے نبی ﷺ کے بعد تجھ پر کوئی حق رکھنے والی ہستی ہے تو وہ ماں ہے ، اللہ تعالی قرآن مجید فرقان حمید میں فرماتے ہیں ، میں تمہارا پالن نہار ، تمہارا رب، تمہارا پروردگار ، تم کو حکماََ وصیت کرتا ہوں جب بھی عبادت کرو میری ہی عبادت کرنا ، میری عبادت کے بعد اپنی ماں اور باپ پر احسان کرنا،اُسی سلسلہ میں حضرت مولانا شوکت حسین مدنی والدہ ماجدہ کے انتقال پر پاکستان تشریف لے گئے تھے ، جب والدہ ماجدہ زندہ تھیں تو تب بھی مولانا صاحب نے خدمت میں کوئی کسر باقی نہ چھوڑی ان کی وفات کے بعد بھی آنکھوں میں آنسو بھرے ہوئے جنازہ پر پہنچ گئے اپنے ہاتھوں سے والدہ ماجدہ کو دفنانے کا شرف حاصل کیا ،حافظ قرآن کی والدہ ماجدہ ویسے بھی جنتی ہوتی ہیں پھر حافظ قرآن کے ہاتھ اللہ کے حضور اُٹھ جائیں تو یقیناََ جنت ملے گی ،حافظ صاحب جرمنی واپس پہنچ چکے ہیں اور اسی سلسلہ میں حضرت مولانا شوکت علی مدنی نے والدہ کے ایضال ثواب کے لئے خوبصورت اور نورانی محفل ذکرو نعت کا اہتمام کیا ہے،انہوں نے جرمنی میں مقیم تمام دوست و احباب سے شرکت کی گزارش کی ہے ، تمام دوست و احباب سے گزارش ہے کہ محفل میں شرکت کر کے محفل کو اور بھی نورانی بنائیں ،بروز اتوار مورخہ 23جولائی محفل بوقت 17:00 Uhr بجے شروع ہو گی اور 19:00 Uhrمحفل کا اختتام کیا جائے گا۔ بعد نماز عصر محمدی لنگر کا بھی اہتمام ہو گا۔

kk

mm

حضرت مولانا شوکت علی مدنی