-،-عوام دشمنی وکرپشن کے ہر مجرم کو نشان عبرت بنایا جائے ‘ راجونی اتحاد-،-
سیاستدانوں سمیت تمام اداروں کے سربراہاں و افسران کی آمدن و اثاثوں کو بھی چیک کیا جائے!
کرپشن کلچر کے خاتمے کیلئے سب کا یکساں احتساب اور مجرموں کیلئے قرار واقعی سزا ضروری ہے !

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) پاکستان راجونی اتحاد میں شامل ایم آر پی چیئرمین امیر پٹی ‘ جی کیوایم سربراہ گجراتی سرکار ‘ ‘ این ایف ایچ آر کے سربراہ محمد اسلم خان فاروقی ‘ہیومن رائٹس رہنما امیر علی خواجہ‘این جی پی ایف چیئرمین عمران چنگیزی ‘ عوامی جرگہ کی چیئر پرسن ڈاکٹر روبینہ یاسمین ‘ خان آف بدھوڑا یحییٰ خانجی تنولی ‘ مارواڑی رہنما اقبال ٹائیگر‘ خاصخیلی رہنما سردار غلام مصطفی خاصخیلی ‘ سولنگی رہنما سردار خادم حسین سولنگی‘ میمن رہنما عدنان میمن‘ راجپوت رہنما عارف راجپوت سماجی‘ فاطمہ میمن ‘ یونس سایانی ‘ روبینہ شاہین و دیگر نے کہا ہے کہ عدلیہ نے جس احتساب کی بنیاد رکھی ہے اگر اس پر پر شوکہ عمارت تعمیر کرنے کیلئے حکومت میں شامل تمام وزراء ‘ تمام اراکین قومی و صوبائی اسمبلی ‘ اراکین سینیٹ سمیت قومی ‘ معاشی ‘ اقتصادی ‘ تجارتی ‘انتظامی اور تحفظ ‘دفاع ‘ انصاف ‘ خدمات ‘ تعلیم ‘ علاج اور سہولیات کی فراہمی مامور تمام اداروں کے سربراہان و اعلیٰ افسران کے اثاثوں و آمدن کی تحقیقات کرائی جائیں اور اختیارو اقتدار کو ذاتی مفادات کیلئے استعمال کرکے ملک وقوم کو نقصان پہنچاتے ہوئے آمدن سے ذائد اثاثو ں کے حامل تمام افراد کو عوام دشمن قرار دیتے ہوئے نہ صرف انہیں عوامی نمائندگی و سرکاری عہدوں کیلئے نااہل قراردیا جائے بلکہ ان سے لوٹی گئی دولت کی پائی پائی وصول کرکے قومی خزانے میں واپس لانے کیساتھ قرار واقعی سزاؤں کے ذریعے انہیں نشان عبرت بناکر پاکستان سے کرپشن و لوٹمار اور اختیارات کے ناجائز استعمال کا مکمل خاتمہ کیا جائے ۔