-،-غیر منتخب شخص وزیراعظم نامزدنہیں ہوسکتا۔محمدناصراقبال خان-،-
ضمنی الیکشن متنازعہ ہوگیا۔سعیدکھوکھر،رضاایڈووکیٹ ،رانابشارت،روحی کھوکھر

ہیومن رائٹس موومنٹ انٹرنیشنل کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان،چیف آرگنائزر میاں محمدسعید کھوکھرایڈووکیٹ، سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ،صدربرطانیہ رانابشارت علی خاں ،سینئر نائب صدور میاں محمداشرف عاصمی ایڈووکیٹ، ندیم اشرف ،روحی بانوکوکھرایڈووکیٹ ،سلمان پرویز ،مرکزی نائب صدور ناصرچوہان ایڈووکیٹ، ممتاز حیدر اعوان ،محمدشاہدمحمود ،صدر پنجاب محمدیونس ملک،نائب صدرشبیرحسین ،صدرنیویارک محمد جمیل گوندل، صدر مدینہ منورہ سرفرازخان نیازی،صدرکراچی یونس میمن ،صدر چنیوٹ راناشہزادٹیپو ،صدرفیصل آبادندیم مصطفی ،صدرٹیکسلا سردارمنیر اختراور صدر قصور میاں اویس علی نے کہا ہے کہ آزاد عدلیہ نے آزاد پاکستان کی بنیادرکھ دی ۔عدالت عظمیٰ کے حالیہ تاریخی فیصلے سے کرپشن مافیا کوکراراجواب مل گیا ہے ۔جوبدعنوانی میں ملوث ہوتے ہیں ناکامی اوربدنامی ان کامقدربن جاتی ہے۔پاکستان میں موروثی سیاست نے جمہوریت کوبے ثمر کردیا ۔جمہوریت کے نام پرقومی شعوراور جمہور سے بھونڈا مذاق کیاجارہا ہے ۔ پاکستان کاوز یراعظم منتخب ہونے کیلئے کیا شریف خاندان کافردہوناواحد میرٹ ہے ۔اگر اس پارلیمنٹ کا کوئی منتخب ممبرباقی ماندہ مدت کیلئے وزیراعظم نہیں بن سکتا توانہیں وفاقی وزیربھی کیوں بنایا گیاتھا۔وزیراعظم کیلئے ضروری اہلیت اورقابلیت بارے وضاحت کی جائے۔ایک ایسا شخص جوابھی پارلیمنٹ کاممبر منتخب نہیں ہوا کس آئین وقانون کے تحت اسے وزیراعظم نامزدکیا گیا ہے۔ظاہر اس نامزدگی سے این اے120میں ضمنی الیکشن کی ساکھ راکھ کاڈھیر بن جائے گی،این اے 120میں ابھی ضمنی الیکشن نہیں ہوا مگروہ متنازعہ ہوگیا۔ وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے ۔محمدناصراقبال خان اورمیاں محمدسعیدکھوکھر نے مزید کہا کہ عدالت عظمیٰ نے جو حالیہ تاریخی فیصلہ دیا ہے ،اگرآئین کی روسے حکمران جماعت اس فیصلے کیخلاف اپیل کر نے کاحق رکھتی ہے توضرورکرے لیکن اپنی خفت مٹانے اورانتقام کی آگ بجھانے کیلئے مادروطن کے آئینی ودفاعی اداروں پربیجا تنقید اوران کی توہین ہرگز نہ کرے ۔پاکستان میں بے رحم احتساب کی شروعات خوش آئند ہے ،باری باری ہرچور کی باری آئے گی ۔انہوں نے کہا کہ دنیا کا کوئی فرداورمعاشرہ احتساب سے مستثنیٰ نہیں ہے ۔ اقامہ کا معاملہ اس قدرسادہ نہیں جس طرح بتایاجارہا ہے،ہربااثر سیاسی شخصیت نے بیرون ملک اپناناجائزپیسہ چھپانے کیلئے اقامہ بنایاتھا ۔ انہوں نے کہا کہ جس طرح جے ٹی آئی کی تحقیقات کے نتیجہ میں کئی خفیہ معلومات منظرعام پرآئی ہیں اب گیند نیب کے کورٹ میں ہے ،یقیناًابھی مزید گھپلے بے نقاب ہوں گے۔