-،-ڈاکٹرعافیہ کسی محمدبن قاسم کی منتظر ہیں۔محمدناصراقبال خان-،-
عالمی ضمیرکرداراداکرے۔سعیدکھوکھر،رضاایڈووکیٹ،اشرف عاصمی ،روحی کھوکھر

ہیومن رائٹس موومنٹ انٹرنیشنل کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان،چیف آرگنائزر میاں محمدسعید کھوکھرایڈووکیٹ، سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ ،سینئر نائب صدورتنویرخان، میاں محمداشرف عاصمی ایڈووکیٹ، ندیم اشرف ،روحی بانوکوکھرایڈووکیٹ ،سلمان پرویز ،مرکزی نائب صدور ناصرچوہان ایڈووکیٹ، ممتاز حیدر اعوان ،محمدشاہدمحمود ،صدر پنجاب محمدیونس ملک،نائب صدرشبیرحسین ،صدرنیویارک محمد جمیل گوندل، صدر مدینہ منورہ سرفرازخان نیازی،صدرکراچی یونس میمن ،صدر چنیوٹ راناشہزادٹیپو ،صدرفیصل آبادندیم مصطفی ،صدرٹیکسلا سردارمنیر اختراور صدر قصور میاں اویس علی نے کہا ہے کہ ڈاکٹرعافیہ کسی محمدبن قاسم کی منتظر ہیں،کاش مسلم حکمرانوں میں سے کوئی ایک محمدبن قاسم ثانی ہوتا۔امریکہ کے سابق صدر براک اوباما کے نام وزیراعظم پاکستان کے ایک مکتوب لکھنے سے ڈاکٹرعافیہ کی سزاختم اوررہائی ہوسکتی تھی مگرارباب اقتدار کوقوم کی اسیر بیٹی پررحم نہ آیا۔ڈاکٹرعافیہ کی رہائی کیلئے سرگرم ان کی ہمشیرہ ڈاکٹرفوزیہ بار بار اپیل کرنے کے باوجودحکمرانوں کوجھنجوڑنے اورجگانے میں ناکام رہیں ۔مسلم حکمران روزمحشر کس طرح اللہ تعالیٰ کاسامناکریں گے،مسلمان بیٹی کفار کی قید میں ہے تومسلم حکمران کس طرح چین سے سوسکتے ہیں۔ڈاکٹرعافیہ کومحض مسلمان ہونے کی پاداش میں بدترین سزاسنائی گئی۔قومی سیاسی قیادت نے قوم کی بیٹی کوامریکہ کے چنگل سے چھڑانے کیلئے اب تک کیاکرداراداکیا ،پارلیمنٹ میں وضاحت کی جائے۔اگر ایک خاتون پارلیمنٹرین کی متنازعہ پریس کانفرنس پر پارلیمنٹ میں تحقیقاتی کمیٹی بن سکتی ہے توڈاکٹرعافیہ کی رہائی کیلئے پارلیمنٹ کے نمائندہ وفود امریکہ سمیت مقتدرملکوں میں کیوں نہیں بھجوائے جاسکتے ۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔محمدناصراقبال خان اورمیاں محمدسعیدکھوکھر نے مزید کہا کہ امریکہ اپنے شہری ریمنڈڈیوس کوقاتل ہونے کے باوجود زراورزور کے بل پرلے گیا مگرمعصوم ڈاکٹرعافیہ آج بھی آزادی کے انتظارمیں ایڑیاں رگڑ نے پرمجبور ہیں ۔ڈاکٹرعافیہ کی ناحق قید سے آبرومندانہ رہائی کیلئے عالمی ضمیربھی اپناکرداراداکرے ۔انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت کی طرف سے فوری طورپرڈاکٹرعافیہ کی رہائی کیلئے سینیٹر مشاہد حسین کی قیادت میں ایک اعلیٰ سطحی وفد امریکہ بھجوایاجائے ۔امریکہ سمیت مقتدرملکوں میں پاکستان کے سفارت خانوں کوڈاکٹرعافیہ کی رہائی کیلئے اپنااپنااثرورسوخ استعمال کرنے کیلئے کہاجائے۔ انہوں نے کہا کہ مظلومیت اورمعصومیت کادوسرا نام ڈاکٹرعافیہ ہے ،ان کی آہیں مسلم حکمرانوں کاپیچھا نہیں چھوڑیں گی ۔