-،-حکمرانوں کے شرانگیز بیانات پرشدیدتحفظات ہیں۔ محمدکامران میاں -،-

مووآن پاکستان کے مرکزی چیئرمین محمدکامران میاں نے کہا ہے کہ حکمرانوں کے شرانگیز بیانات پرشدیدتحفظات ہیں۔وفاقی وزیرخارجہ خواجہ آصف کے حالیہ موقف پرگہری تشویش ہے ،ہم مووآن پاکستان کی طرف سے اس بیانیہ کو مسترد کرتے ہیں۔مسلم لیگ (ن) اورپیپلزپارٹی کے درمیان غیراعلانیہ اتحاد پاکستان کی سا لمیت کیلئے خطرہ ہے،وطن دوست قوتوں کوفوری طورپراورپوری طرح متحدومٹحرک ہونے کی ضرور ت ہے ۔مووآن پاکستان محب وطن جمہوری سیاسی ومذہبی قوتوں کے درمیان پل کاکرداراداکرے گی ۔اس وقت ایک قومی ضابطہ اخلاق اوربھرپوراے پی سی کی اشد ضرورت ہے۔وہ پارٹی آفس میں مووآن پاکستان یوتھ ونگ کے ورکرز کنونشن سے خطاب کررہے تھے ۔محمدکامران میاں نے مزید کہا کہ حکمرانوں کی ترجیحات اورسمت سنجیدہ پاکستانیوں کی سمجھ سے ماورا ہے۔ حکمران کسی سلطانی گواہ کی طرح پاکستان کے قومی رازاورقومی مفادات کونقصان پہنچارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ فردجرم عائدہونے کے بعداسحق ڈارکوفوری طورپر مستعفی ہوجاناچاہئے ۔اگرقومی چوروں کا بے رحم احتساب نہ ہوا توملک میں خونی انقلاب آسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کی بدعنوانی اوربدانتظامی پاکستان پربوجھ ہے ،حکمرانوں کااپناوجود بھی کسی بوجھ کی طرح ہے ۔خواجہ آصف کے طرز سیاست میں سنجیدگی کافقدان ہے ،وہ وزرات خارجہ سے حساس منصب کیلئے موزوں انتخاب نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ میں تعمیری بحث کے بعد ایک قومی بیانیہ جاری کیاجائے جوحکمرانوں کی سیاسی غلامی نہیں بلکہ قومی غیرت کاغماز ہو۔ملک میں قبل ازوقت انتخابات کے انعقادمیں کوئی قباحت نہیں،تاہم احتساب میں کوئی رکاوٹ برداشت نہیں کی جائے گی ۔