-،-سفارت خانہ پاکستان ایتھنز نے یونان میں مقیم پاکستانی انسانی سمگلر جاوید اسلم ارائیں کو معاونت کی پیش کش کردی-،-

ایتھنز(سکندرریاض چوہان)سفارت خانہ پاکستان ایتھنز نے یونان میں مقیم پاکستانی انسانی سمگلر جاوید اسلم ارائیں کو معاونت کی پیش کش کردی۔تفصیلات کے مطابق سفارت خانہ پاکستان کی جانب سے یونان کی پاکستانئ برادری کو مطلع کیاگیاہے کہ ایتھنز یونان میں مقیم انسانی سمگلر اور ہنڈی کے کاروبار سے وابستہ جاوید اسلم ارائیں جس کے خلاف پاکستان اور یونان میں مختلف نوعیت کے مقدمات درج ہیں جس کے خلاف گوجرانوالاکی خصوصی عدالت نے اس کے خلاف ریڈ وارنٹ جاری کیے تھے جوتاحال موثر ہیں جس پر ملزم نے یونانی عدالتوں سے رجوع کرکے انسانی حقوق کی بنیاد پر پناہ لے لی تھی اور پاکستان ڈیپورٹ ہونے کے ڈر سے ملزم ماضی میں سفارت خانہ پاکستان کے خلاف انتقامی سرگرمیوں میں ملوث رہاہے تاکہ اس کو یونان بدر نہ کیاجاسکے اور مقامی تنظیموں کی مدد سے اپنا بچاو کرتارہاہے ۔سفارت خانہ پاکستان نے اپنے تازہ ترین بیان کہاہے کہ یہ قانونی معاملہ ہے جو صرف عدالت کے ذریعہ سے ہی حل ہوگااس میکں سفارت خانہ کا کردارنہیں ہے تاہم اس کو پاکستان میں عدالتوں میں پیش ہونے کے لیے معاونت فراہم کرنے کی پیش کش کی ہے تاکہ وہ اپنے مقدمات کا دفاع کرکے قانونی تقاضے پورے کرسکے۔سفارت خانہ پاکستان نے ملزم کو سفارت خانہ اور پاکستان کے خلاف اپنی سرگرمیاں فوری بندکرنے کاکہاہے ۔مزیدبرآں موجودہ سفیر پاکستان خالد عثمان قیصرنے مذکورہ ملزم کو قومی قانونی   دھارے میں لانے کے لیے متعددکوششیں کی ہیں۔