۔،۔اشافن برگ مسجد بلال میں بسلسلہ جشن میلاد النبیﷺ خوبصورت اور نورانی محفل کا اہتمام کیا گیا۔،۔

nh
نذر حسین
شان پاکستان جرمنی اشافن برگ۔ آج اشافن برگ Aschaffenburgمسجد بلال میں زیر سرپرستی علامہ عبد الطیف چشتی الازہری صاحب ایک نورانی محفل کا انعقاد کیا گیا جس میں نہ صرف اشافن برگ بلکہ جرمنی کے دور دراز علاقوں سے عاشقان رسولﷺ تشریف لائے اور محفل کو رونق بخشی مسجد میں تِل رکھنے کو جگہ نہ تھی یعنی چھوٹی سی مسجد میں ڈیڑھ سو کے قریب مر د حاضر تھے اور ایسے ہی دوسرے کمرے میں خواتین کی بڑی تعداد بھی موجود تھی، عبد الطیف چشتی الازہری صاحب مسجد کے امام و خطیب ہونے کے ساتھ ساتھ قاری و حافظ اور نقابت کے شہسوار کی حیثیت سے بھی جانے جاتے ہیں ،نماز ظہر کے فوراََ بعد ذکر و اذکار کی محفل سجائی گئی آپ نے تلاوت قرآن پاک سے محفل شروع کی اور نعتوں کا سلسلہ شروع کیا جن میں محمد جنبان، محمد عثمان اور خطیب مسجد پاک دارالسلام کے چھوٹے صاحبزادے عبد الحادی نے ۔میرا دل بدل دے ،میرا غفلت میں ڈوبا دل بدل دے پڑھ کر شریک محفل کے دل جیت لئے،خالد محمود قادری،نسیم وقار چوہدری، محمد شعیب بٹ، ننھے نعت خوان سید محمد احمد شاہ ، حاجی عابد حسین نورن برگ سے عبد العزیز خان من ہائیم سے حافظ مجاہد ،زین العابدین، سید افضال شاہ،حاجی بابر چشتی صاحب نے نعت رسولﷺ پیش کی،حافظ نوید صاحب کو خطاب کے لئے حاضر ہونے کو کہا تو وہ اپنے دل میں چھپی بات کو فوراََ زبان پر لے آئے اور فرمایا کہ جرمنی کے ہر شہر میں اہل سنت کے ادارے موجود ہیں اگر ہم آج یہ عہد کر لیں کہ ہم نے مسجد بنانی ہے تو صرف 100افراد بھی وعدہ کر لیں کہ دو ،دو ہزار یورو مسجد کے لئے دیں گے تو مسجد بنائی جا سکتی ہے میں ابھی اور اسی وقت اعلان کرتا ہوں کے میں 2000یورو دوں گا، مولانا صدیق نے بھی اسی وقت پانچ سو یورو نکال کر دے دیئے، اس کے علاوہ انہوں نے فرمایا کہ ہم اگر آنے والی نسل کے متعلق سوچ لیں تو ہمارے لئے کوئی دقت ہ دشواری نہیں رہے گی، ان کا فرمانا تھا کہ اتحاد ہونا چاہیئے ، حق چھوڑنے والے جنت کے سردار نے حق چھوڑ دیا ،ہم کو توجہ دینی چاہیئے ہر گھر میں دس دس سال پرانی باتیں دہرائی جاتی ہیں یہ باتیں ختم ہونے والی نہیں اگر ختم کرنا چاہیں تو دو منٹ میں ہو جاتی ہیں تین دن سے زیادہ ناراضگی خدا اور اس کے رسول کو بھی پسند نہیں ہم ہیں کہ مسجد میں نعرے بھی لگاتے ہیں اکٹھے بیٹھتے بھی ہیں جیسے ہی باہر نکلتے ہیں ایک دوسرے کا چہرہ بھی دیکھنا پسند نہیں کرتے ہمیں آج مسجد اس محفل کے صدقہ کچھ سیکھ کر ہی نکلناہے تو یہ عہد کر لیں کے بچھڑے اور ناراض بہن بھائیوں اور دوست و احباب کو راضی کرنا ہے تو آپ دنیا کو دوسری نظر سے دیکھیں گے،حضرت مولانا عبد الطیف چشتی الازہری نے بھی محفل میں شامل خواتین و حضرات سے درخواست کی کہ آج کی محفل کا یہی پروانہ ساتھ لے کر اُٹھیں نماز عصر کے بعد محمد صدیق مصطفائی صاحب نے درود و سلام پیش کیا محمد صدیق صاحب نے اللہ کے حضور ہاتھ اُٹھا کر درد بھری آواز میں نہ صرف حاضرین محفل بلکہ پوری دنیا کے مسلمانوں کے حق میں دعائیں کیں نہ صرف پاکستان بلکہ پوری دنیا کے اسلامی ممالک اور دوسرے ممالک میں بسنے والے مسلمانوں کے لئے دعائیں مانگیں ، محفل کے اختتام پر حاضرین کو لنگر پیش کیا گیا۔

IMG_5291 IMG_5292 IMG_5293 IMG_5294 IMG_5295 IMG_5296 IMG_5297 IMG_5298 IMG_5299  IMG_5301 IMG_5302 IMG_5303 IMG_5304 IMG_5306 IMG_5308 IMG_5312 IMG_5313 IMG_5314 IMG_5318 IMG_5321 IMG_5322 IMG_5323 IMG_5324 IMG_5326 IMG_5330 IMG_5333 IMG_5335 IMG_5339 IMG_5340 IMG_5343 IMG_5344 IMG_5346 IMG_5349 IMG_5351 IMG_5353 IMG_5356 IMG_5357 IMG_5359 IMG_5362 IMG_5365 IMG_5367 IMG_5373 IMG_5374 IMG_5376 IMG_5378 IMG_5379 IMG_5380 IMG_5384 IMG_5389 IMG_5393 IMG_5395 IMG_5397 IMG_5399 IMG_5409

IMG_5406 IMG_5405