-،-کفار کی غلام مسلمان قیادتوں سے نجات لازم ہوچکی ہے ‘ جی کیو ایم-،-
فلسطین ‘ کشمیر ‘ شام ‘ افغانستان اور عراق میں مظالم کے ذمہ دار مفاد پرست مسلم حکمران ہیں !
امریکہ کی آؤ بھگت اور اسرائیل کی حمایت کی پالیسی مسلم لہو کو ارزاں بنارہی ہے‘ عرفان سولنگی

کراچی ( اسٹاف رپورٹر ) غزہ کی سرحد پر حقوق کیلئے احتجاج کرنے والے پر امن فلسطینیوں پر اسرائیلی فوج کی وحشیانہ فائرنگ سے فلسطینی صحافی یاسر مرتضیٰ سمیت 32سے زائد فلسطینیوں کی شہادت اور 2ہزار سے زائد فلسطینی مظاہرین کے زخمی ہونے کے واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے گجراتی قومی موومنٹ کے چیئرمین عرفان سولنگی پٹی والا ‘ سینئر وائس چیئرمین طارق صدیقی ‘ رہنما خواتین ونگ ارم رحیم عبداللہ و دیگر نے کہا ہے کہ فلسطین میں بہنے والے لہو کی ذمہ دار صرف اسرائیلی قیادت ہی نہیں بلکہ ہر وہ اسلامی قوت بھی ہے جو اپنے مفادات کیلئے اسرائیل و امریکہ کی کاسہ لیسی کررہی ہے جس کی وجہ سے نہ صرف اسرائیل و امریکہ مل کر شام میں بغاوت کو ہوا دے رہے اور بغاوت کچلنے کے نام پر شام میں مسلمانوں کا لہو بہارہے ہیں بلکہ کشمیر کی طرح فلسطین میں بھی مسلمانوں کا قتل عام کرنے کے بعد یہ الزام بھی لگایا جارہا ہے کہ غزہ میں کوئی معصوم شہری نہیں بلکہ غزہ کے سب لوگ حماس کے تنخواہ دار ہیں جبکہ انسانی حقوق کیلئے آواز اٹھانے والا ہر فرد اور اسرائیل کے جنگی جرائم کا پردہ فاش کرنے والا ہر صحافی حماس کے عسکری ونگ کا کارکن و دہشتگرد ہے جس کے بعد یہ بات واضح ہورہی ہے کہ دنیا میں مسلمانوں کا مستقبل انتہائی مخدوش ہے جس کے ذمہ دار مسلم دنیا کے وہ حکمران ہیں جو قیادت و ترجمانی اور دنیائے اسلام کے مفادات کے تحفظ کی بجائے اپنے اقتدار و اختیار کے تحفظ کیلئے صلیبی‘ صیہونی ‘ طاغوتی ‘ استعماری ‘ سامراجی اور کفر کی طاقتوں کے آگے سجدہ ریز ہیں اور اگر عوام نے جلد انقلاب لاکر مفادات کی غلام ان عوام دشمن قیادتوں سے نجات حاصل نہیں کی تو ان غلام قیادتوں پر حکمران کفر کی طاقتیں دنیا سے مسلمانوں کا نام و نشان مٹادیں گی ۔