۔،۔ مہذب کہلائے جانے والے معاشرہ میں بچیوں سے زیادتی بد نما داغ ہوتے ہیں۔،۔
جمہوری ملک بھارت کے وزیر اعظم نریندر ا مودی نے کہا ہے کہ بچیوں سے زیادتی کرنے والے اجرموں کو نشان عبرت بنا دیا جائے گا۔
شان پاکستان بھارت نئی دہلی۔ غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق نئی دہلی میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بھارتی وزیر اعظم نریندرا مودی کو بالآخر مقبوضہ کشمیر میں 8سالہ بچی آصفہ بانو اور اتر پردیش میں زیادتی کا شکار ہونے والی لڑکی کا خیال آ ہی گیا، نریندرا مودی نے تقریب میں خطاب کے دوران مجرموں کی گرفتاری اور متاثرین کو انصاف کی فراہمی کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ مجرم کتنے ہی با اثر کیوں نہ ہوں قانون کی گرفت سے بچ نہیں پائیں گے۔ بھارت میں عورتوں اور بچیوں کے ساتھ زیادتی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر اپنی آہنی خاموشی کو توڑتے ہوئے نریندا مودی کا کہنا تھا کہ ایسے واقعات قانون کے ساتھ ساتھ سماج کی ناکامی بھی ہیں، کسی بھی مہذب کہلائے جانے والے معاشرے میں بچیوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات معاشرے پر بد نما داغ ہوتے ہیں جس کے سد باب کے لئے ہر شخص کو اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہو گا ورنہ معاشرہ ناکام ہو جائے گا۔ واضح رہے جموں و کشمیر کے علاقہ کٹھوعہ میں 10 جنوری کو مسلمان چرواہوں کے قبیلے (بکر وال) کی کم سن بچی آصفہ یانو کو اغواہ کر کے مندر کے تہہ خانے میں قید رکھ کر زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد بے دردی سے قتل کر کے لاش باہر پھینک دی گئی تھی۔ اس کے علاوہ اتر پردیش کے علاقہ اناوُنا میں بھارتی جنتا پارٹی کے رکن اسمبلی (کلدیپ سنگھ سنگار) نے اپنے بھائیوں کے ساتھ مل کر 17 سالہ لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

11 111 rape4_090414065317_090414080644 112