-،-نوازشریف کی وفاداریاں پاکستان کے ساتھ ہرگز نہیں ۔الطاف شاہد-،-

shahid
اپناسیاسی مستقبل تاریک کرنیوالے پاکستان کی سا لمیت کے درپے ہیں
پاک سرزمین پارٹی برطانیہ ویورپ کے صدر چودھری محمدالطاف شاہد نے کہا ہے کہ پی ایس پی نے وطن دشمن عناصر کی سرکوبی کابیڑہ اٹھایا ہے۔سیّدمصطفی کمال ،انیس احمدقائم خانی اوررضاہارون کی سیاست قومی وحدت اورسا لمیت کی علامت ہے۔ نوازشریف کی وفاداریاں پاکستان کے ساتھ ہرگز نہیں ہیں۔جونوازشریف کی طرح دشمن کے لہجے میں بات کرے گا،پاکستانیوں کے نزدیک وہ ان کادوست نہیں ہوسکتا۔ ایک نااہل شخص ملک دشمنی پراترآیا ہے۔ اپنے ہاتھوں سے اپناسیاسی مستقبل تاریک کرنیوالے پاکستان کی سا لمیت سے کھیلنے کے درپے ہیں۔نااہلی کے بعد نوازشریف کاخبث باطن مسلسل باہرآرہا ہے۔ہم وطنوں سمیت اوورسیزپاکستانیوں نے میاں نوازشریف کابیانیہ مسترد کردیا ۔ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے چودھری محمدالطاف شاہدنے مزید کہا کہ نوازشریف وزرات عظمیٰ تودرکنار وزرات اعلیٰ کیلئے بھی اہلیت پرپورانہیں اترتے تھے ۔ان کاتین باروزیراعظم منتخب ہوناملک وقوم کی بدقسمتی کے سواکچھ نہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی ترقی میں کرپشن بنیادی رکاوٹ ہے۔پاکستان میں احتساب کے نظام کی کمزوری سے بدعنوان بے لگام ہوگئے اورپاکستان میں ترقی کاپہیہ جام ہوگیا۔انہوں نے کہا کہ بدعنوان لوگ اپنے ناجائز اثاثوں کی طاقت سے اپنادفاع کرتے ہیں۔آج بھی بااثرملزم احتساب اورانصاف کی آنکھوں میں دھول جھونک رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ محتسب کیخلاف ملزم کے تحفظات کی کوئی اخلاقی حیثیت نہیں،چیئرمین نیب سے مستعفی ہونے کیلئے دباؤ کوئی حیثیت نہیں رکھتاکیونکہ اپنے بچاؤکیلئے شورمچاناچور کی فطرت اورضرورت ہے۔ پی ایس پی کے چیئرمین سیّدمصطفی کمال اورکارکنا ن بے رحم احتساب کے حامی ہیں۔ عوام کابااختیار بنائے بغیر پاکستان آگے نہیں بڑھ سکتا ۔انہوں نے کہا کہ بڑی سیاسی پارٹیوں کے سربراہان ایوان اقتدارتک رسائی کیلئے عوام کو استعمال اورپھران کااستحصال کرتے ہیں،پی ایس پی سیاسی کلچر تبدیل کرکے دم لے گی۔انہوں نے کہا کہ پی ایس پی کے دبنگ چیئرمین مصطفی کمال کاسیاسی فلسفہ بہت منفرداورمختلف ہے ،وہ ریاست کی مضبوطی کیلئے ریاستی اداروں کی خودمختاری،عوام کی خوشحالی اورخودانحصاری کے حامی ہیں۔پاکستان میں خودکارنظام رائج کیاجائے جس کے تحت ادارے اپنے اپنے دائرہ کار کے اندرکام کریں اورعوام کوپیچیدہ مسائل سے بے نیاز کردیاجائے ۔انہوں نے کہا کہ ”جان ہے توجہان ہے”محاورے کے تحت شہروں سے دیہاتوں تک پاکستانیوں کوصحت کی جدید سہولیات کی مفت فراہمی ریاست کافرض اورسیاسی قیادت پرقرض ہے۔شاہراہوں کی تعمیر کی اہمیت سے انکار نہیں مگر جہاں شہریوں کوبنیادی ضروریات اورصحت کی سہولیات میسر نہ ہوں وہاں حکومت کیلئے ترجیحات بدلنا ضروری ہوجاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی تعمیروترقی کیلئے کرپشن سے بڑاکوئی سپیڈ بریکر نہیں۔ پاکستان کی سرمایہ داراشرافیہ نے مخلص قیادت کوابھرنے نہیں دیا ۔