-،-یوٹیلٹی اسٹورز پر سبسڈائز اشیاء کی فراہمی یقینی بنائی جائے‘ جی کیو ایم -،-
ایک ارب سترکروڑ کی سبسڈی ‘مقتدر طبقے کی جیب میں ڈالنے کی کوشش نہ کی جائے‘ عرفان پٹی
’’شیطان طبقہ ‘‘ حرکت میں آچکا ہے ‘ رمضان سے قبل ہر چیز کی قیمتوں میں اضافہ کردیا گیا ہے!

کراچی ( اسٹاف رپورٹر )رمضان المبارک کی آمد سے قبل ہی اشیائے خوردونوش کی گرانی کو حکومتی ناکامی اور گراں فروش طبقہ کی سرپرستی قرار دیتے ہوئے گجراتی قومی موومنٹ کے چیئرمین عرفان پٹی والا‘ سینئر وائس چیئرمین طارق صدیقی اور رہنما شعبہ خواتین ارم رحیم عبداللہ نے کہا ہے کہ عوام کو امن ‘ تحفظ ‘ انصاف اور سہولیات کی فراہمی کے ساتھ اشیائے ضروریہ کی قیمتیں بھی کنٹرول میں رکھنا اور گراں فروشی ‘ مہنگائی و ذخیرہ اندوزی کو روکنا بھی حکومتی ذمہ داری و فریضہ ہے مگر حکومت ٹیکسوں کی بھر مار کے ذریعے مہنگائی کو فروغ دینے کیساتھ گراں فروشوں کو بھی چھوٹ دے رہی ہے جس کی وجہ سے رمضان کی آمد سے قبل ہی ’’شیطان طبقہ ‘‘حرکت میں آگیا ہے ‘ سبزی ‘ گوشت ‘ پھل اور دیگر اشیائے خوردونوش و اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں من مانا اضافہ کردیا گیا ہے جبکہ رمضان پیکیج کے نام پر یوٹیلٹی اسٹورز کیلئے ایک ارب73کروڑ کی سبسڈی کی منظوری اور 14مئی سے یوٹیلٹی اسٹورز پر رمضان پیکج کے اطلاق کے باوجود یوٹیلٹی اسٹورز پر اشیائے خوردونوش و اشیائے ضروریہ کی عدم دستیابی حکومتی نااہلی یا پھر کرپشن کی غماز ہے اسلئے حکومت فوری طور پر اس جانب توجہ دیکر مہنگائی و گرانی کو روکے اور یوٹیلٹی اسٹورز پر تمام سبسڈائز اشیاء کی فراہمی یقینی بنائے اور بصورت دیگر یکم رمضان تک ایسا نہ ہونے کی صورت میں چیف جسٹس کا فریضہ ہے کہ وہ اس حوالے سے ایکشن لیتے ہوئے قوم کو حکمرانی کی کرپشن ‘ مہنگائی ‘ گرانی اور ماہ رمضان میں بجلی و گیس کی بندش سے ہونے والی صعوبت و تکلیف سے نجات دلائیں ا ور عوامی مفادات کا تحفظ کریں !