۔،۔امریکی ہوائی کمپنی کے ملازم نے جہاز چرا کر قریبی جزیرے میں گرا کر تباہ کر دیا۔،۔

شان پاکستان امریکا سیئیٹل۔ بین الاقوامی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکی ایئرپورٹ سیئیٹل Seattle سے ایک کمپنی ملازم جس کا نام رچرڈ رسل Richard Russell بتایا جاتا ہے نے جہاز چرایا اور قریبی جزیرے میں گرا کر جہاز کو تباہ کر دیا اور خود بھی مر گیا، ایئرپورٹ حکام کے مطابق 29 سالہ Richard Russell نے جمعہ کی رات کو Seattle ایئرپورٹ سے جہاز چرایا ، بغیر پائلٹ لائسنس کے جہاز کو اُڑایا ، اطلاع ملتے ہی 2ایف 15لڑاکا طیاروں نے جہاز کا پیچھا کیا جس پر 90 منٹ کی اڑان کے بعد Richard Russell نے جہاز کو گرا کر خود اور جہاز کو تباہ کر دیا ،اطلاع کے مطابق رچسرڈپچھلے تین سال سے ایئرپورٹ پر ملازمت کر رہا تھا ، کمپنی کے افراد کا کہنا ہے کہ اتنے پیچیدہ جہاز کو بغیر لائسنس کے اُڑانا بہت مشکل ہے۔یہ ابھی واضح نہیں ہے۔ تاہم ٹاور کی طرف سے رسل کے ساتھ گفتگو کی ریکارڈنگ میں ہواباز کو طیارے کے اندر موجود ایندھن کی کمی کے بارے میں بات کرتے سنا جا سکتا ہے۔ وہ یہ بھی کہتا ہے کہ وہ جہاز اتار سکتا ہے کیوں کہ اس نے ویڈیو گیمز میں اس کی مشق کر رکھی ہے۔وہ کنٹرولر سے یہ بھی پوچھتا ہے، ‘کیا اس کی سزا عمر قید ہو گی؟’ اس کے جواب میں کنٹرولر کہتا ہے، ‘رچرڈ، اس بارے میں فکر نہ کرو۔ بس جہاز کو بائیں موڑنا شروع کرو۔’