۔،۔ چوروں کااحتساب جہاد،ڈی جی نیب سلیم شہزاد مجاہد ہیں : محمدناصراقبال خان۔، ۔

ہیومن رائٹس موومنٹ انٹرنیشنل کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان نے کہا ہے کہ چوروں کااحتساب کرناجہاد،ڈی جی نیب سلیم شہزاد مجاہد ہیں۔ایوانوں سے میدانوں تک چوروں کاگروہ اپنے” زور”کے بل پراپناسیاہ ”زر”چھپانے یابچانے کاخیال دل سے نکال دے،نیب یقیناباری باری ہرایک چور اورمنہ زورکوقانون کی نکیل ڈالے گا ۔ظاہر ہے قانون کے شکنجے میں آنے پرچوردیوانہ وارشورمچایاکرتے ہیں،نیب حکام کو ان کی پرواہ کرنے کی قطعی ضرورت نہیں ۔بالخصوص جہاں چوروں کی تعداد بہت زیادہ ہووہاں یہ گروہ اپنے بچاؤکیلئے ریاست اورریاستی اداروں پراپنابھرپوردباؤڈالتا ہے،عوام پرعزم نیب حکام کی پشت پرکھڑے ہیں۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے ۔محمدناصراقبال خان نے کہا ہے کہ منتخب ارکان اسمبلی نے ہردورمیں ایک دوسرے کوچور قراردیا، اگروفاقی وزیراطلاعات فوادچوہدری یاڈی جی نیب سلیم شہزاد سمیت کسی دوسرے نے پارلیمنٹرین کوچور کہا توان کااستحقاق کس طرح مجروح ہوگیا۔ڈی جی نیب سلیم شہزاد کے انٹرویوزکوبنیادبناکراپوزیشن پارٹیوں کااحتجاج نیب کومرعوب اوربلیک میل کرنے کی ناکام کوشش ہے ۔انہوں نے کہا کہ مجاہدکامران نے اپنی گرفتاری کی خفت مٹانے کیلئے نیب کیخلاف بے بنیاد بہتان تراشی کاسہارالیا۔ مجاہدکامران اپنے دورمیں جس شاہانہ اندازسے مخصوص افرادکونوازتے اورجعلی ڈگریاں تقسیم کرتے رہے اس پرموصوف کامحاسبہ کرنا نیب کافرض اوراس پرقرض ہے،مجاہدکامران کی ”بھرتیاں” اور”پھرتیاں” قابل گرفت ہیں۔انہوں نے کہا کہ مجاہدکامران کے حالیہ بیان سے ان کے سیاسی مقاصد بے نقاب ہوگئے،ان کی مسلم لیگ (ن) سے ہمدردیاں کسی سے پوشیدہ نہیں ہیں۔پاکستان میں کوئی آئین اور قانون سے ماورانہیں ہے،جوکوئی چوری اورقانونی شکنی میں ملوث پایاگیا اس کااحتساب ضرورہوگا۔ انہوں نے کہا کہ اگربدعنوانی کاباب بندکرناہے تونیب کوچوروں کیلئے آسیب بناناہوگا۔اپوزیشن رہنماؤں کی زبانیں چلتی ہیں جبکہ ڈی جی نیب سلیم شہزاد کاکام بولتا ہے۔انہوں نے کہا کہ نیب حکام ہرگز سیاسی انتقام میں ملوث نہیں، چوروں سے یقیناًملک وقوم کی ایک ایک پائی وصول کی جائے گی ۔نیب قوانین میں نرمی کی ضرورت نہیں بلکہ انہیں مزید سخت کرناہوگا۔انہوں نے کہا کہ چوروں کو جوپیسے کی” گرمی” ہے وہ قانون میں ”نرمی” سے دورنہیں ہوگی۔چوروں کے” شور”سے عوام کا”شعور” متاثر نہیں ہوگا۔