۔،۔عورت کو نسوانیت سے محروم کرنے کی سازش ہورہی ہے ‘ جی کیوایم ۔،۔
فریئر ہال میں عالمی یوم خواتین پر خواتین سے جو کچھ کرایا گیا وہ خود خواتین کیلئے خطرناک ہے!
فریئر ہال میں منعقدہ شو کے ذریعے خواتین و مردوں کے درمیان جنگ کی بنیاد رکھی گئی ہے !

کراچی ( اسٹاف رپورٹر )گجراتی قومی موومنٹ کے سربراہ گجراتی سرکار عرفان سولنگی عرف پٹی والا المعروف سورٹھ ویر نے خواتین کے عالمی دن کے موقع پر خواتین حقوق کے نام پر فریئر ہال میں ہونے والے بے شرمی کے مظاہرے پر تنقید وافسوس کرتے ہوئے کہا ہے کہ انسان کو جنم دینے والی عورت صرف ماں کے روپ میں ہی نہیں بلکہ بیوی ‘بہن اور بیٹی کے روپ میں بھی قربانی ‘ ایثار اور خدمت کا پیکر ہے اسی لئے اپنے ہر روپ میں انسان کی ضرورت وباعث راحت اور قابل تعظیم ہے اس لئے اسے اس کے تمام انسانی ‘ سماجی ‘ معاشی ‘ معاشرتی ‘ مذہبی ‘ قانونی اور آئینی حقوق ملنے چاہئیں مگر افسوس کہ جہالت ‘ فرسودہ روایات اور نظام و قانون کی کمزوریوں کے باعث ہمارے معاشرے کی عورت ظلم و استحصال کا شکار ہے مگر روشن پہلو یہ ہے کہ معاشرے میں تعلیم و شعور فروغ پارہے ہیں اور خواتین خانگی ‘ معاشی ‘ معاشرتی ‘ سماجی و قومی ترقی میں شامل ہوکر استحصال و مظالم کیخلاف آواز اٹھارہی ہیں اورتعلیم یافتہ و باشعور مرد بھی ان کی آواز میں آواز ملارہے ہیں جس کی وجہ سے معاشرے میں بڑی حد تک سدھار واقع ہورہا ہے مگر خواتین کے عالمی دن کے موقع پر فریئر ہال کراچی میں خواتین کے حقوق کے نام پر جو تماشہ لگایا گیا ‘ جس قسم کے نعرے لگے اور خواتین نے جس قسم کے پلے کارڈ و بینر دکھائے اس کی کسی طرح سے بھی حمایت نہیں کی جاسکتی کیونکہ یہ شو خواتین اور مردوں کے درمیان جنگ چھیڑنے کی ایک دانستہ کوشش تھی جبکہ ہمیں عورت کے حقوق ہی نہیں بلکہ اس کی عزت اور اس کا حترام بھی عزیز ہے اور ہم عورت کو اس کا ہر حق اس کے احترام ‘ عزت اور تشخص کے تحفظ کیساتھ دلانا چاہتے ہیں مگر اس قسم کے مظاہروں سے عورت کو حقوق تو نہیں ملیں گی البتہ لوگ اسے اس نظر سے دیکھنے اور اس نام سے پکارنے لگیں گے جو عورت کیلئے ’’گالی ‘‘ تصور کیا جاتا ہے اسلئے خواتین حقوق کے نام پرنسوانیت کی عزت و تحفظ کیلئے خطرہ بننے والے پروگراموں سے دور رہنا ہی خواتین اور ان کے محفوظ وخوشحال مستقبل کیلئے سودمند ہے !

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے