-،-اسیر قومی قیادت کے ساتھ نارواسلوک قومی جرم ہے :عامر نواب خان-،-
حکمران سیاسی انتقام بندکردیں ، انہوں نے جوبویاوہ انہیں کاٹناپڑے گا

پاکستان مسلم لیگ(ن) کے مرکزی رہنماء اوراین اے 8سے قومی اسمبلی کے سابق امیدوار عامرنواب خان نے کہا کہ اسیر قومی قیادت کے ساتھ نارواسلوک قومی جرم ہے،حکمرانوں کواپنے ایک ایک ستم کاسودسمیت حساب دیناہوگا۔پرویزی آمریت سے آمرانی ڈکٹیٹرشپ تک میاں نوازشریف اصولی اورمزاحمتی سیاست کی علامت بن کرابھرے ہیں۔ انہیں اپنی ذات کیلئے کچھ نہیں چاہئے ،وہ تو” ووٹ کوعزت دو ”کیلئے انتقامی سیاست کا ڈٹ کرمقابلہ کررہے ہیں۔منتقم مزاج حکمرانوں کا ضمیر کے قیدی میاں نوازشریف کوطبی سہولیات فراہم نہ کرنا کہاں کی انسانیت اورکس قسم کی جمہوریت ہے۔ حکمران سیاسی انتقام بندکردیں ورنہ انہوں نے آج جوبویاوہ انہیں عنقریب کاٹناپڑے گا۔ میاں نوازشریف نے پرویزی آمریت میں سرنڈر نہیں کیا توموجودہ آمرانی حکومت کس کھیت کی مولی ہے۔نوازشریف کی علالت پر حکمرانوں کی سیاست شرمناک اور قابل مذمت ہے ۔وہ اپنے اعزازمیں ایک استقبالیہ سے خطاب کررہے تھے ۔ عامرنواب خان نے مزید کہا کہ افسوس حکمران ٹولے کو میاں نوازشریف کی بے بسی کاتماشا دیکھنے میں دلچسپی ہے۔جعلی وزیراعظم عمران خان کی طرف سے پنجاب حکومت کومیاں نوازشریف کے علاج کی ہدایات جاری کرنامحض ڈھونگ میں ،اس میں کوئی حقیقت نہیں۔ انہوں نے کہا کہ میاں نوازشریف اپنی باوفااورباصفا اہلیہ جبکہ مریم نوازاپنی شفیق ومہرباں والدہ کولندن میں بسترمرگ پرچھوڑ کرنام نہاد احتساب اوربوگس مقدمات کاسامنا کرنے کیلئے پاکستان آئے تھے جہاں انہیں ائیرپورٹ سے گرفتارکرلیا گیا تھا۔میاں نوازشریف اپنے خلاف انتقامی مقدمات کاسامنا کرنے کیلئے تیار ہیں تاہم اس وقت انہیں علاج کی اشد ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکمران ہماری قیادت کے طبی مسائل اورہمارے جذبات واحساسات کوسمجھیں ۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے