۔،۔ جرمنی کے شہر ہمبرگ میں پاکستانی و کشمیری کمیونٹی کی امن مارچ۔مطیع اللہ۔،۔

مطیع اللہ شان پاکستان جرمنی ہمبرگ ۔کمشیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی اور کشمیر امن مارچ میں سینکڑوں افراد کی شرکت جرمنی کے صنعتی و بحری شہر ہمبیرگ میں پاکستانی کمیونٹی  کی جانب سے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کا مارچ کا انعقاد پاکستانی  کمیونٹی کے نمائندوں نے کہا ھے کہ بھارت دنیا کے انکھوں مین دھول جھونک رہا ھے۔ انڈیا نے کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے ریکارڈ توڑڈالے ہیں کشمیرکے ظلم وستم کو دنیا میں دکھانے پر پاکستان پر جارحیت کرنے کی کوشش کی گئی کشمیر کے ایشو جلد حل نہیں کیا گیا تو دونون ممالک ایٹمی ہتھیاروں کا استعمال کرہنگے جس سے پوری دنیا لپیٹ مین ائے گی  پاکستانی و کشمیری کمیونٹی ،، پاکستان جرمن پریس کلب ،  اور پاکستان اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پی ایس اے نے امن مارچ میں اہم کردار کیا مقررین نے کہا کہ دنیا میں امن قائم کرنے اور ایٹمی جنگ کو روکنے کے لیے یورپی یونین اور یو این او کشمیر کے مسئلہ حل کرنے مین اپنا کردار ادا کرے اس موقع پر پاکستانی کیمونٹی نے سیاسی جماعتوں سے بالاتر ہوکر  شیرخوار بچوں سے لیکر جوان،  بوڑھے اور خواتین و طالبات کی بڑی تعداد امن مارچ مین شریک ھوئے  کشمیری رہنما نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے لاکھوں انسانوں کو جیل نما وادی میں قید رکھنے والے بھارت دنیا میں جمہوریت کے علمبردار بننے کی کوشش کررہا ھے انڈیا نے کشمیریوں کے حقوق غصب کیے ہر روز نہتے کشمیریوں پر ظلم کے پہاڑ توڑہا ھے سینکڑوں بچے زخمی اور ہزاروں شہداء کا خون رائیگاں نہیں جائے گا جرمن عربی و ترکش نمائندوں نے امن مارچ سے خطاب کرتے ھوئے کہاکہ ہندوستان نے کشمیریوں پر اتنا ظلم وستم کئے ھے جس کی مثال نہیں ملتی ہم انسانی حقوق کے علمبرداروں سے مطالبہ کرتے ھے کہ کشمیریوں کو ان کا حق خودارادیت دیاجائے کشمیر میں بھارتی مظالم کے داستانوں سے سوشل میڈیا بھرا پڑا ھے کشمیری عوام انسانی زندگی گزارنے کو ترس رہیے ھے دنیا کے انصاف فراہم کرنے والے ادارے ہوش کے ناخون لیں  کیمونٹی کے رہنما عامر شہزاد نے کہا کہ کشمیری گزشتہ سترسالوں سے انصاف کے منتظر ھے انسانی حقوق کے عالمی ادارے کشمیریوں کو انصاف فراہم کرنے سے قاصر ھے اقوام متحدہ اپنے پاس کئے ھوئے قرار دادوں پر عمل کروائے حافظ عظیم نے کہا کہ کشمیر جنت نظیر پر ہندوبنیا قابض ھوا  سات لاکھ سے زائد افواج نے کشمیریوں کا جینا دوبھر کیا ھے بھارتی افواج نے کشمیری ایشوز کو دبانے کے لیے پاکستان پر جارحیت کی جس پر پاکستانی ائرفورس نے جوابی کارروائی کی پاکستان جنوبی ایشیاء میں امن کا خواہ ھے جبکہ بھارت کشمیرکو حق خودارادیت دینے کے بجائے دیگر ہتھکنڈے استعمال کررہا ھے کیمونٹی کے رہنما اور امن مارچ کے منتظم غضفر الدین نے کہا کہ دنیا میں کمشیری سب سے زیادہ مظلوم و محکوم قوم ھے جو وادی جنت نظیر کے ھوتے ھوئے بھی زندہ جیل میں قید ھے اور ہر روز اپنے پیاروں کو دفنانے میں اس آس پر زندہ ھے کہ کل صبح ازادی نصب ھوگی انہوں نے کہا کہ بھارتی افواج نے نہتے کشمیریوں پر فائرنگ کھول کر بچوں بوڑھوں کو اندھا کردیا نوجوانوں کو اپاہج کردیا انہوں نے کہا کہ پلوامہ حملہ بھارتی کے عام انتخابات سے قبل مودی سرکار کا کارنامہ ھے جس نے ہمشیہ انتخابات سے قبل ایسے واقعات کا سہارا لیا ھے لیکن اب ایسا نہیں چلے گا کشمیری بیدار ھوچکے ھے ازادی کا سورج جلد طلوع ھونے کو ھے مارچ کے شرکاء نے بھارتی مظالم پر مبنی پوسٹر اور بینر اٹھائے ھوتے کشمیر کی زادی کے حق میں نعرے لگاتے رہیے مارچ کے شرکاء میں بچے بوڑھے اور خواتین کی بزرگوں نے بڑی تعداد میں شرکت کی مارچ کے اختتام پر کشمیری شہداء کے لیے دعائے مغفرت کی گی امن مارچ ڈیڑھ کلومیٹر پر محد رہا ، امن مارچ کو ہمبیرگ پولیس نے بھر پور سیکورٹی فراہم کی امن مارچ ہمبیرگ کے مشہور شاہراہوں و مارکیٹوں سے گزرتا راتھ ہاوس ہمبیرگ پر پورامن طریقے اختتام پزیر ھوا –