۔،۔اسلام کا اصل دشمن اسرائیل نہیں مسلمان حکمران ہیں ‘ جی کیو ایم۔،۔
اختیارات و تعیشات کے عادی مسلم حکمرانوں کی مفاد پرستی مسلمانوں پر ظلم کروارہی ہے!
مسجد الاحمر کی نائٹ کلب میں تبدیلی پر مسلم حکمرانوں کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے‘محمد عرفان سولنگی

کراچی ( اسٹاف رپورٹر )اسلام امن ‘ برداشت ‘ تحمل ‘ اخلاص اور ایثار کا مذہب ہے مگر اس کا مطلب یہ ہرگز نہیں ہے کہ اسلام ظلم سہنے اور ظالم کے سامنے سرنگوں رہنے کی ہدایت کرتا ہے اسلام نے ظلم کیخلاف اپنی استطاعت کے مطابق آواز اٹھانے اور جہاد کرنے کا درس دیا ہے مگر افسوس کہ اسلامی مملکتوں کے حکمران اسلامی ایمان کے درجات کی پست ترین گہرائیوں میں گر چکے ہیں اور مفادات کی خاطر امن و برداشت کے نام پر ہونے والے ہر ظلم پر خاموشی اختیار کرکے عالم اسلام کے مستقبل کو ہی تاریک نہیں کررہے بلکہ اللہ کی نافرمانی کے ذریعے اللہ کے عذاب کو بھی دعوت دے رہے ہیں ۔ گجراتی قومی موومنٹ کے سربراہ گجراتی سرکار عرفان سولنگی عرف پٹی والا نے مقبوضہ تیرھویں صدی میں جنوبی بیت المقدس میں تعمیر کی جانے والی تاریخی مسجد الاحمر کو اسرائیل کی جانب سے نائٹ کلب میں تبدیل کئے جانے کے باوجود اسلامی ریاستوں کے حکمرانوں کی خاموشی پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ مفادات کی ٹھنڈ نے مسلمان حکمرانوں کو حرارت ایمان سے محروم کردیا ہے اور تعیشات و اختیارات کی ہوس نے انہیں باطل و ظلم کے سامنے سرجھکانے پر مجبور کرکے مشرک و کافر سے بد تر بنادیا ہے جو عالم اسلام کے مستقبل کیلئے انتہائی خطرناک علامت ہی نہیں بلکہ قرب قیامت کا ثبوت بھی ہے اسلئے دنیا کے تمام مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ اللہ رب العزت سے اپنا تعلق مضبوط و مستحکم بناتے ہوئے اس کی رحمت طلب کریں اورقادر مطلق سے دعا کریں کہ اللہ ظالموں ‘ ظلم کا ساتھ دینے والوں اور ظلم پر خاموش رہنے والوں سے عالم اسلام کو نجات دلائے اور ہماری ہی نہیں بلکہ ہمارے ایمان و مستقبل کی حفاظت بھی فرمائے!