۔،۔ دوہری شہریت کی بنیادپربنیادی حقوق سلب نہیں کئے جاسکتے: محمدجمیل گوندل۔،۔
وطن پرست اوورسیزپاکستانیوں کوقومی سیاست میں ان کاجائزمقام دیاجائے

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ نیویارک کے صدر محمدجمیل گوندل نے کہا ہے کہ اوورسیزپاکستانیوں کی دعاؤں اوروفاؤں کامحورمادروطن ہے۔ مختلف ملکوں میں مقیم پاکستان کے لوگ اپنے وطن کوامن وآشتی اورتعمیروترقی کاگہوارہ دیکھنے کے خواہاں اوراس کیلئے دن رات کوشاں ہیں۔ہم کئی دہائیوں سے سات سمندرپاراپنے محبوب وطن کی بیرونی قرض کے بوجھ سے نجات یقینی بنانے کیلئے خون پسینہ بہارہے ہیں،وطن پرست اوورسیزپاکستانیوں کوقومی سیاست میں ان کاجائزمقام دیاجائے۔دوہری شہریت کی بنیادپرکسی انسان کے بنیادی حقوق سلب نہیں کئے جاسکتے۔ان پڑھ،بری شہرت،جعلی ڈگریوں والے اہم سرکاری عہدوں پراوراسمبلیوں میں براجمان ہیں جبکہ دہری شہریت والے ووٹ نہیں لے سکتے،یہ امتیازی قانون ختم کیا جائے۔وہ ایک اجتماع سے خطاب کررہے تھے۔محمدجمیل گوندل نے مزید کہا کہ اوورسیزپاکستانیوں کوووٹ دینے کے ساتھ ساتھ امیدوارکی حیثیت سے انتخابی سرگرمیوں میں شریک ہونے کا حق بھی دیاجائے۔اگرپاکستان کی معیشت اس وقت سانس لے رہی ہے تواس کاکریڈٹ اوورسیزپاکستانیوں کوجاتا ہے۔ آئین میں ترمیم کرتے ہوئے دہری شہریت والے پاکستانیوں کوانتخابی نظام میں شریک اوران کے مشاہدات وتجربات سے استفادہ کیا جائے۔اوورسزپاکستانیوں سے فنڈزمانگنے والی پارٹیاں ان کے حقوق کیلئے آوازکیوں نہیں اٹھاتیں۔انہوں نے کہا کہ ہمارے اوورسیز ہم وطن بیرونی ملک پاکستان کیلئے رضاکارانہ سفارت کاری کررہے ہیں،انہیں امورمملکت سے دوررکھنادانشمندی نہیں ہے۔اگربرطانیہ اورامریکہ سمیت کئی متمدن ملکوں میں دہری شہریت والے پاکستانیوں کے انتخابی امیدواربننے پرکوئی قدغن نہیں توپھر پاکستان میں کیوں ہے۔انہوں نے کہا کہ اوورسیزپاکستانیوں کی قابلیت،انتظامی صلاحیت اوروطن عزیز کے ساتھ کمٹمنٹ پرشبہ نہیں کیا جاسکتا۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے