۔،۔ کولون مرکزی ٹرین سٹیشن پر 10مسلمان نوجوانوں کو حراست میں لے لیا گیا۔نذر حسین۔،۔

شان پاکستان جرمنی کولون۔ کولون پولیس نے بروز منگل عید الفطر کے موقعہ پر 18سے28 سال کی عمر کے دس افراد کو حراست میں لے لیا، گواہان کی روشنی میں ان پر الزام عائد کیا گیا کہ انہوں نے۔ اللہ اکبر کے نعرے بلند کئے تھے بعض نے عربی لباس زیب تن کیا ہوا تھا جس پر شہریوں نے فوراََ پولیس کو بلا لیا بعد اذاں تفتیش مکمل ہونے پر سب کو رہا کر دیا گیا۔ نوجوانوں کا کہنا تھا کہ رمضان المبارک کے اختتام پر ہم جشن منا رہے تھے کہ اچانک پولیس نے ہمیں گرفتار کر لیا۔ جرمنی میں مسلمانوں کی مرکزی کونسل Muslime in Deutschland (ZMD)نے پولیس پر الزام لگایا ہے کہ کولون پولیس نے مسلمان نوجوانوں کو ٭نسل پرستی کا نشانہ بنایا ہے٭دوسری طرف پولیس کے سربراہ اووی یعقوب Uwe Jacobنے پولیس اہلکاروں کو تحفظ میں لیتے ہوئے نسل پرستی کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے اپنی ڈیوٹی سر انجام دی ہمیں سوشل میڈیا میں بے عزت نہ کیا جائے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے