۔،۔ اسلامی معاشرے میں حواکی بیٹی تختہ مشق بن گئی: محمدجمیل گوندل۔،۔
معصوم بیٹیوں کادامن تارتارکرنیوالے شیطانوں کو قرارواقعی سزادی جائے

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ نیویارک کے صدر محمدجمیل گوندل نے کہا ہے کہ بدقسمتی سے اسلامی معاشرے میں حواکی بیٹی کوتختہ مشق بنالیا گیا۔یہ کون درندے قوم کی بیٹیوں کی ناموس نوچ رہے ہیں،معصوم بیٹیوں کادامن تارتارکرنیوالے شیطانوں کو قرارواقعی سزادی جائے۔یہ دورخواتین کیلئے کسی پرآشوب دورکی طرح ہے،ظلم وتشدداورناانصافی نے خواتین میں احساس محرومی پیداکردیا۔مایوسی کی صورت میں متاثرہ عورتیں کوئی بھی انتہائی قدم اٹھاسکتی ہیں۔کوئی رشتہ سے انکارپرصنف نازک کے چہرے پر تیزاب پھینکتا ہے توکوئی معمولی تکرارپرانہیں آگ میں جھونک دیتا ہے۔غیرت کے نام پربھی زیادہ تر عورتوں کوموت کے گھاٹ اتاراجاتا ہے،گھروں میں کام کرنیوالی بچیاں توشاید مالکان کے نزدیک انسان ہی نہیں ہیں۔وہ ایک اجلا س سے خطاب کررہے تھے۔محمد جمیل گوندل نے مزید کہا کہ ریاست عورتوں کی آبروریزی اورگھروں کے اندر معصوم بچیوں پربہیمانہ تشدد روکنے کیلئے دوررس اصلاحات کرے۔ مظلوم خواتین کاحصول انصاف کیلئے خودسوزی اورخودکوپنجروں میں قید کرنے کاسلسلہ تشویشناک ہے،اگران اندوہناک واقعات کوفوری روکانہ گیاتو ہمارامعاشرہ جہنم سے بدترہوجائے گا۔خواتین کی آبروریزی کے واقعات اورمحرکات ایک قوم کی حیثیت سے ہمیں متنبہ کررہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ خواتین کی عزت محفوظ بنانے کیلئے اسلامی تعلیمات کی روشنی میں سخت قانون سازی ناگزیر ہے۔خواتین سے متعلقہ گھناؤنے واقعات میں ملوث شیطان صفت عناصر کو قرارواقعی سزادے کردوسروں کیلئے نشان عبرت بنا یا جائے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے