۔،۔ بھارت میں 24 سالہ مسلم نوجوان پر ہندووں کا ظلم و بربریت نوجوان جان بحق۔،۔

شان پاکستان بھارت نئی دہلی جھار۔ لوکل میڈیا کے مطابق بھارتی شہر Jharkhand جھار کھنڈ میں ہندو انتہا پسندوں نے ظلم و بربریت کی انتہا کر دی اور حیرانی کی بات تو یہ ہے کہ مودی سرکار ابھی تک خاموش تماشائی بنے شر پسندوں کی حرکات کو نظر انذاز کئے ہوئے ہے۔ تفصیلات کے مطابق بھارتی شہر جھار کھنڈJharkhand میں انتہا پسندوں نے مسلما ن نوجوان شمس تبریز انصاری کو بجلی کے کھمبے سے باندھ کر گھنٹوں مارتے رہے مارنے کے دوران شمس تبربز انصاری کو زبر دستی جے شری رام اور جے ہنومان کے نعرے لگانے کا کہتے رہے۔ گھنٹوں تشدد ہوتے دیکھ کر نہ تو پولیس پہنچی اور نہ ہی کسیی نے انتہا پسندوں کو اس فعل سے منع کیا کہا جاتا ہے کہ شمس تبربز انصاری پر سائیکل چوری کا الزام لگا کر تشدد کا نشانہ بنایا گیا مقامی پولیس کا کوئی اہلکار موقع پر نہ پہنچ پایا اور نوجوان اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھا۔ حالیہ برسوں میں ریاست میں کئی ایسے انتہا پسند اور جنونی ہندووں کے حملوں کی رپورٹس جاری کی گئیں ہیں۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے