۔،۔ سیکورٹی خدشات کے پیش نظر امریکی فوجی دستوں کی سعودی عرب میں تعیناتی۔،۔

شان پاکستان سعودی عرب ریاض۔ سعودی پریس ایجنسی کے مطابق فرماں روا شاہ سلمان بن عبد العزیز نے خلیجی ریاستوں کو در پیش سیکورٹی خدشان کو مد نظر رکھتے ہوئے خطے کے سحفظ اور پائیدار امن کے لئے امریکی فوجیوں کی آمد اور سعودی عرب میں تعیناتی کی منظوری دے دی۔سعودی عرب کی وزارت خارجہ کی جانب سے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ سے جاری بیان میں بھی کہا گیا ہے کہ سعودی عرب اور امریکا طویل عرصے سے قائم مستحکم تعلقات کو خطے میں جنگ کے خطرات سے نبرد آزما ہونے کے لیے استعمال کریں گے۔امریکی افواج سعودی عرب میں پہلے بھی کئی بار تعینات رہی ہیں اور 2003 میں عراق جنگ ختم ہونے پر سعودی عرب سے روانہ ہوگئی تھیں۔ اس کے بعد سعودی عرب میں امریکی افواج کی تعیناتی کا اب یہ پہلا موقع ہوگا۔دوسری جانب امریکی وزارت دفاع کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکی فوجی دستے، جنگی ساز و سامان اور وسائل سعودی عرب بھیجے جائیں گے جو مشرق وسطیٰ میں جنگ کے خطرات اور امن دشمنوں کو مذموم اقدامات سے باز رکھیں گے تاکہ خطے کے تحفظ کو یقینی بنایا جا سکے۔واضح رہے کہ عالمی جوہری معاہدے سے امریکا کی دستبرداری کے بعد پیدا ہونے والا تناؤ گھمبیر صورت اختیار کر گیا ہے اور مشرق وسطیٰ کے پانیوں پر جنگ کا سا سما ہے جہاں ایک جانب امریکی جنگی بیڑہ لڑاکا طیاروں سے لیس کھڑا ہے تو دوسری جانب ایران کے انقلاب پاسداران کی کشتیاں، ہیلی کاپٹر اور ڈرون کی نقل وحرکت میں بھی اضافہ ہوا ہے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے