۔،۔ اللہ دین کا چراغ بچپن سے سنتے چلے آئیں ہیں آج امریکا میں اللہ دین کی انگھوٹی دیکھی۔،۔

شان پاکستان امریکا واشنگٹن۔ امریکی صدر چونلڈ ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر پر پاکستان اور بھارت کے درمیان ثالث کا کردار ادا کرنے کی پیشکش کر دی۔شان پاکستان واشنگٹن کے مطابق وزیر اعظم پاکستان عمران خان Imran Khanاپنے وفد کے ساتھ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپٍ Donald Trumpسے ملنے وائٹ ہاوُس پہنچے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشیShah Mehmood Qureshi، جنرل قمر جاوید باجوہQamar Javed Bajwa آرمی چیف اور وزیر اعظم کے مشیربرائے تجارت عبد الرزاق داوُد Abdul Razaq Dawoodبھی ان کے ہمراہ تھے۔ وائٹ ہاوُس پر ڈونلڈ ٹرمپ اور عمران خان نے مصافہ کیا وہاں موجود پریس کے چند سوالوں کے جواب دیتے ہوئے دونو رہنماء ون آن ون ملاقات کے لئے اندر تشریف لے گئے جہاں پر مسئلہ کشمیر،افغان امن اور دیگر چند اہم امور پر بات چیت کی ملاقات کے دوران ڈونلڈ ٹرمپ کا فرمانا تھا کہ پاک بھارت کشیدگی میں کمی اور مسئلہ کشمیر پر ثالثی کردار ادا کرنے کی پیشکش بھی کی۔امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ عمران خان سے ملاقات انتہائی خوشگوار ماحول میں ہوئی جس میں بھارت اور افغانستان کے معاملے پر بات چیت ہوئی، امریکا پاکستان اور بھارت کے درمیان کشیدہ تعلقات میں بہتری کا کردار ادا کرسکتا ہے کشمیر ایک خوبصورت خطہ ہے جہاں بمباری ہورہی ہے، اس طویل تصفیہ طلب مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے کوئی کردار ادا کرسکوں تو مجھے خوشی ہوگی اور بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے بھی مسئلہ کشمیر پر مدد کے لیے کہا ہے۔افغان مسئلے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا کہ میں عمران خان کی بات سے 100 فیصد اتفاق کرتا ہوں کہ افغان مسئلے کا حل مذاکرات سے ہوگا اسی لیے افغانستان میں اپنی افواج کی تعداد کم کررہے ہیں، پاکستان افغان امن عمل کے لیے ہماری کافی مدد کررہا ہے اور پاکستان افغان عمل میں کردار ادا کرکے لاکھوں زندگیاں بچا سکتا ہے۔قبل ازیں وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ مجھے دورہ امریکا کی دعوت ڈونلڈ ٹرمپ نے دی اور ان کے ساتھ انتہائی خوشگوار ماحول میں بات چیت ہوئی، ملاقات میں پاک بھارت کشیدگی پر بات ہوئی ہم بھارت کے ساتھ مثبت بات چیت کے لیے مکمل طور پر تیار ہیں، صدر ٹرمپ کی قیادت میں امریکا بھارت اور پاکستان کو قریب لاسکتا ہے۔عمران خان نے کہا کہ افغان جنگ سے لاکھوں لوگ متاثر ہوچکے ہیں، افغان مسئلے کا کوئی فوجی حل نہیں اس کا حل صرف مذاکرات ہیں، افغانستان میں امن سب سے زیادہ پاکستان کے مفاد میں ہے، پاکستان نے خطے کے امن میں اہم کردار ادا کیا ہے امید ہے کہ آنے والے دنوں میں طالبان کو بات چیت جاری رکھنے پر آمادہ کرسکوں گا، ہم افغان امن معاہدے کے قریب پہنچ چکے ہیں اور ہمارا کردار افغان قیادت کو مذاکرات کی میز پر لانا ہے۔عمران خان نے کہا کہ دہشت گردی کی جنگ میں ہم نے 70 ہزار جانیں قربان کیں جبکہ ہماری ملکی معیشت کو 150 ارب ڈالر سے زائد مالیت کا نقصان ہوا۔بعد ازاں وزیراعظم عمران خان کے ساتھ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور امریکی خاتون اول میلانیا ٹرمپ نے تصاویر بھی بنوائیں۔ بعدازاں خاتون اول نے ملاقات کی تصاویر سوشل میڈیا پر شیئر کردیں اور کہا کہ وزیر اعظم عمران خان کے ساتھ ملاقات خوشگوار رہی۔اللہ دین کا چراخ بچپن سے سنتے چلے آ رہے ہیں لیکن آج امریکا جیسے ملک میں نہ تو اللہ دین کا چراغ اور نہ ہی اڑتی قالین،نہ ہی تسبیح دیکھنے میں نظر آئی البتہ اللہ دین ک انگھوٹھی ضرور دیکھنے کو ملی ٭اول سے آخر تک عمران خان انگلی پر پہنی جادوئی انگھوٹی کو گھماتے نظر آئے۔اللہ نے تین چیزیں پیدا کی ہیں یہ چوتھی چیز جس نے جنم لیا ہے وہ ہے موکل۔دیکھا جائے تو حضرت سلیمان علیہ سلام کے علاوہ جن کسی کا غلام نہیں جو کہتے ہیں کہ جن ہمارے غلام ہیں حالانکہ وہ خود جنوں کے غام ہوتے ہیں۔نبی اکرم ﷺ جنوں کے بھی نبی تھے انہوں نے پیٹ پر پتھر تو باندھ لیا لیکن کبھی کسی جن سے کھجور تک نہیں لی۔شاید پورا وقت پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان موکل سے رابطہ میں رہے کیوں کہ وہ پورا وقت وہ اپنی انگھوٹی کو گھماتے نظر آ رہے تھے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے