۔،۔ مسلسل غیر قانونی کرفیو اور بد ترین پابندیوں کے نفاذ کو 34 دن ہو گئے۔نذر حسین-،-

شان پاکستان مقبوضہ کشمیر۔ بین الاقوامی خبر رساڈ ادارے کے مطابق ٭آرٹیکل 370اور 35A٭کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے غیر آئینی عمل کے بعد سے مقبوضہ کشمیر میں مسلسل 34 دن سے کرفیو نافذ ہے، ذرائع آمد و رفت مکمل طور پر معطل، مواصلاتی نظام منقطع اور کاروباری سرگرمیاں بن ہیں، بھارتی ریاستی دہشت گردی نے کشمیریوں کی زندگی اجیرن کر دی ستم بالائے ستم غذائی بحران اور ادویات کی قلت نے کشمیریوں کی سخت اذیت سے دو چار کر رکھا ہے۔ لوگوں کو مسجدوں میں نماز پڑھنے کی اجازت نہیں تقریباََ 5ہفتوں سے نماز جمعہ کی ادائیکی کو روک دیا گیا ہے خوف ردہ بھارتی حکومت نے وادی میں مزید فوج تعینات کرنے کا فیصلہ صادر کر دیا۔سخت ترین پابندیوں کے باوجود بہادر کشمیری موقع ملتے ہی سڑکوں پر نکل آتے ہیں اور جذبہ آزادی سے سرشار ہو کر بزدل مودی سرکار کے خلاف نعرے بازی کرتے ہیں، قابض بھارتی فوجی اور پولیس اہلکار نہتے مظاہرین کو پیلٹ گنز، گولیوں اور آنسو گیس شیلنگ کا نشانہ بناتے ہیں اور زخمیوں کو طبی امداد کی فراہمی میں رکاوٹیں ڈالتے ہیں۔دوسری جانب اسیر حریت رہنماؤں نے کشمیریوں کو اقلیت میں تبدیل کرنے کی گھناؤنی سازش کو ناکام بنانے کے لیے عوام سے اپیل کی ہے کہ شہری اپنی جائیداد بھارتیوں کو کسی صورت نہ بیچیں۔ قابض بھارتی فوج نے مزید 29 کشمیری شہریوں کو ریاست اتر پردیش کے علاقے آگرہ جیل منتقل کر دیا ہے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے