۔،۔ آج قونصل جنرل آف پاکستان فرینکفرٹ میں خواتین نے یکجہتی کشمیر کی آواز اُٹھائی۔،۔

نذر حسین شان پاکستان جرمنی فرینکفرٹ۔ قونصل جنرل آف پاکستان فرینکفرٹ میں آج خواتین نے کشمیر میں ہونے والے ظلم کے خلاف آواز اُٹھائی،قائم مقام قونصل جنرل شعیب منصور نے خواتین کا شکریہ ادا کیا جو صرف 15گھنٹے کے شارٹ نوٹس پر تشریف لائیں،خواتین کا کہنا تھا کہ ہم کشمیری عوام اور خواتین کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑی ہیں ہمارا دل خون کے آنسو روتا ہے جب ہم دیکھتی ہیں کہ مائیں اپنے جوان بیٹے آزادی کے لئے شہید کروا دیتی ہیں ان کا کہنا تھا کہ معصوم چھوٹے چھوٹے بچے بھوک سے بلک رہے ہیں اور ہم اپنی آواز اُٹھائے بغیر کچھ نہیں کر سکتیں،ان کا کہنا تھا کہ ہم اقوام متحدہ تک اپنی آواز پہنچانا چاہتی ہیں کہ وہ مسئلہ کشمیر کو سنجیدہ لے کہیں ایسا نہ ہو کہ کشمیریوں کی نسل کو تباہ کر دیا جائے، ان کا مزید کہنا تھا کہ جس کشمیر کو خون سے سینچا گیا ہے وہ کشمیر کشمیریوں کا ہے۔ قائم مقام قونصل جنرل شعیب منصور کا کہنا تھا کہ 58 ممالک کا مشترکہ اعلامیہ پاکستان کی تاریخی کامیابی ہے ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم اپنی خواتین کو بھی نہ صرف مسئلہ کشمیر بلکہ عام طور پر بھی قونصل خانہ میں فعال طور پر خوش آمدید کہتے ہیں ہم اپنی خوتین کے ساتھ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی درندگی کے خلاف آواز اُٹھاتے ہیں، یاد رہے شعیب منصور جب سے تشریف لائے ہیں انہوں نے طلباء و طالبات کو کمیونٹی میں فعال کیا ہے وہ طلباء و طالبات جن کو کوئی نہیں جانتا تھا وہ اب ہر جلسہ و جلوس اور مظاہرے میں آگے آگے نظر آتے ہیں ایسے ہی ہماری خواتین بھی مظاہروں میں اپنے بچوں سمیت آیا کریں۔خواتین کا کہنا تھا کہ 47دن سے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو لگا ہوا ہے ہم یورپ میں بس رہے ہیں ہم پورپین یونین اور جرمن گورنمنٹ سے اپیل کرتی ہیں کہ کشمیر میں لگایا کرفیو ختم کروایاجائے اور آرٹیکل 370اور35Aکو بحال کیا جائے اور کشمیریوں کو حق خود ارادیت دیا جائے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے