۔،۔ چلی میں ہوشربا مہگائی کے خلاف پرتشدد مظاہرے 3افراد جھلس کر ہلاک۔،۔

شان پاکستان چلی سینٹ یاگو۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق چلی Chileکے دارالحکومت سینٹیاگو Santiago de Chileمیں مہنگائی اور کرایوں میں اضافہ کے باعث پُتشدد مظاہروں نے جنم لیا یاد رہے یہ ہنگامے 14 اکتوبر سے شروع ہوئے تھے اس دوران پولیس اور مظاہرین کے درمیان جھڑپوں کے دوران شہراہیں میدان جنگ میں تبدیل ہو گئیں ذرائع آمد و رفت معطل جبکہ تمام کاروباری مراکز بند کر دیئے گئے۔احتجاجی مظاہرین میں موجود شرپسندوں نے دارالحکومت کے معروف سپر اسٹور میں لوٹ مار کی اور پھر اسٹور کو آگ لگادی جس کے نتیجے میں 3 افراد بری طرح جھلس گئے جنہیں قریبی اسپتال لے جایا گیا تاہم تینوں افراد جانبر نہ ہوسکے۔ اس واقعے کے بعد پولیس نے مظاہرین کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کردیا۔ادھر چلی کے صدر سیباستیان پانیئيرا نے زير زمين ٹرين کے کرایوں میں اضافے کا فیصلہ واپس لینے کا اعلان کرتے ہوئے مشتعل مظاہرین سے پُر امن طور پر منشتر ہونے کی اپیل کی ہے تاہم اب تک چلی میں ایمرجنسی نافذ ہے۔ پر تشدد مظاہروں میں 156 پولیس اہلکار اور 11 شہری زخمی ہوئے جب کہ 300 سے زائد مظاہرین کو گرفتار کیا جا چکا ہے-

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے