۔،۔ مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا 77واں روز حالات کشیدہ ادویات اور خوراک کی قلت۔،۔

شان پاکستان مقبوضہ کشمیر۔ وادی کشمیر کا دنیا سے تعلق تاحال منقطع ہے جبکہ کرفیو نافذ کئے ہوئے 77 دن ہو چکے ہیں، وہ جنت نظیر وادی سسکتے نظر آ رہی ہے وادی میں نام نہاد سرچ آپریشن کا سلسلہ جاری ہے نوجوانوں اور بچوں کی پکڑ دھکڑ سے بھارتی افواج بچوں تک کو خوف میں مبتلاکر چکے ہیں وہ کسی نہ کسی طریقہ سے کشمیریوں کو ہراساں کر رہے ہیں تا کہ وہ منہ سے آواز تک نہ نکالیں اور گھروں میں محصور ہو کر رہ جائیں۔ بھارتی فورسز کی جانب سے مختلف علاقوں میں مظاہرین پر آنسو گیس کی شیلنگ کی گئی جس سے متعدد کشمیری زخمی ہو گئے۔ وادی میں خوف کے سائے برقرار ہیں اور قابض بھارتی فوج نےکشمیریوں کی زندگی اجیرن بنا دی ہے۔ وادی میں حالات تاحال کشیدہ ہیں اور وادی کا دنیا سے تعلق تاحال منقطع ہے جبکہ وادی میں خوراک اور ادویات کی قلت بھی برقرار ہے۔کٹھ پتلی انتظامیہ کے جانب سے 77روز سے جاری بندش کے باعث رابطے منقطع ہیں،مودی سرکار کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو دبانے میں ناکام ہے اور وادی میں قابض بھارتی فوج کے خلاف مظاہروں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔وادی میں موبائل فون،انٹرنیٹ سروس بند اور ٹی وی نشریات تاحال معطل ہیں اور وادی میں خوراک اور ادویات کی شدید قلت برقرارہے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے