۔،۔ برطانوی حکومت کو پارلیمنٹ میں برگزٹ پر پھر ایک بار شکست۔،۔

شان پاکستان برطانیہ لندن۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق 19 اکتوبر کو برطانوی ایوان میں بریگزٹ Brexitکے معاملہ پر ووٹنگ ہوئی جسے پارلیمانی ممبرز نے مسترد کر دیا بریگزٹ کے حق میں 322 جبکہ مخالفت میں 306ووٹ پڑے جس کی وجہ سے بریگزٹ اب مزید تاخیر کا شکار ہو گیا ہے۔برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ معنی خیز ووٹ حاصل کرنے کا موقع ضائع ہو گیا، حکومت یورپی یونین چھوڑنے کے لیے قانون سازی متعارف کراے گی۔ حزب اختلاف کے رہنما جیریمی کوربن نے کہا کہ ایوان نے نو ڈیل کے حادثے سے بچنے پر واضح فیصلہ دے دیا۔ نئی بریگزٹ ڈیل پر ووٹنگ کے لیے برطانوی پارلیمنٹ کی جانب سے 37 سال بعد اجلاس ہوا۔برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن نے اجلاس میں ڈیل کو برطانیہ اور یورپ کے لیے نیا راستہ قرار دیا جبکہ اجیریمی کوربن نے اسے پرانی ڈیل سے بھی بدتر قرار دیا تھا۔ برطانوی پارلیمنٹ کے جاری اس غیر معمولی اجلاس میں اراکین پارلیمنٹ نے ووٹنگ میں حصہ لیا۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے