۔،۔ بھارت میں عدلیہ سمیت کوئی اقلیت آزاد نہیں:محمدناصراقبال خان۔،۔
انتہاپسندانڈیاکوکنٹرول کررہے ہیں:رضاایڈووکیٹ،اشفاق کھرل،تنویرخان،ناصرقریشی،شکیل اعوان
مودی سرکار کاخبث باطن آشکارہوگیا:فیصل پاشا،وسیم قرشی،سلمان پرویز،ناصرچوہان،اشرف عاصمی

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدر محمدناصراقبال خان،سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ،چیف آرگنائزر اشفاق احمدکھرل ایڈووکیٹ،مرکزی آرگنائزرمحمد فیصل پاشا،مرکزی سینئر نائب صدور تنویرخان،مخدوم وسیم قریشی ایڈووکیٹ،ناصرقریشی،محمداشرف عاصمی ایڈووکیٹ، نائب صدور نوشادحمید،سلمان پرویز،ناصرچوہان ایڈووکیٹ، شکیل اعوان، ممتازاعوان،محمدشاہدمحمود،ایڈیشنل سیکرٹری جنرل سلطان حسن بٹ،صدر پنجاب محمدیونس ملک،نائب صدر پنجاب جان محمدرمضان،صدرچنیوٹ راناشہزادٹیپو،صدرٹیکسلاسردارمنیراختر،صدر کوئٹہ کامران خان بازئی،صدرکراچی یونس میمن اورصدرشیخوپورہ عمران حیدر نے کہا ہے کہ بھارت میں عدلیہ سمیت کوئی اقلیت آزاد نہیں۔ بھارت حجم میں جبکہ پاکستان کرداراورانسانی واخلاقی اقدار کے معاملے میں اپنے ہمسایہ سے بہت بڑا ہے۔اگربھارتی پارلیمنٹ یا عدلیہ میں سے کوئی ایک ادارہ بھی آزادہوتا تواس وقت آٹھ ملین کشمیری یرغمال نہ ہوتے،انتہاپسندانڈیاکوکنٹرول کررہے ہیں۔بھارت کے ہرادارے میں شدت پسندی کادوردورہ ہے۔بھارت میں مسلمانوں کوان کاکوئی بنیادی حق ملتا ہے اورنہ انصاف۔بھارتی عدالت کامتنازعہ فیصلہ بابری مسجد کی شہادت سے بڑاسانحہ ہے۔بھارتی سپریم کورٹ کابابری مسجد کے مقام پررام مندرتعمیرکرنے کافیصلہ تعصب پرمبنی ہے۔ مودی کے ہوتے ہوئے بھارت کوکسی دشمن کی ضرورت نہیں۔پاکستان نے کرتارپورراہداری کی صورت میں مذہبی راوادی کاشاندارجبکہ بھارت نے بابری مسجد کی اراضی پرمندرتعمیرکرنے کا فیصلہ سناتے ہوئے تعصب کابدترین مظاہرہ کیا۔جس وقت پاکستان میں بھارتی پنجاب کے سکھ جشن اس وقت بھارت میں مسلمان سوگ منارہے تھے۔پاکستان کی طرف سے بار بار کشادگی کامظاہرہ کرنے کے باوجودبھارتی نفرت کی شدت میں کوئی کمی نہیں آئی۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔محمدناصراقبال خان، محمدرضاایڈووکیٹ،اشفاق احمدکھرل، تنویرخان، وسیم قریشی ایڈووکیٹ اورسلمان پرویز نے مزید کہا کہ بابری مسجدکی شہادت کامرکزی مجرم نریندر مودی آج اقتدار میں ہے،اس کے ہوتے ہوئے بھارت میں مسلمانوں کو مذہبی عبادات کا حق اورشفاف انصاف نہیں مل سکتا۔ بھارتی کی خونخوارمودی سرکار کشمیرکوہڑپ نہیں کرسکتی۔انہوں نے کہا کہ کشمیرکی آزادی جبکہ بھارت کامزیدبٹوارہ نوشتہ دیوار ہے۔بابری مسجد کی شہادت کے معاملے میں بھارتی عدالت نے مودی سرکار کاخبث باطن آشکار کردیا۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے