۔،۔ اسلامو فوبیا میں مبتلا جنونی شخص نے آسٹریلین ریسٹورنٹ میں بیٹھی مسلم خاتون پر حملہ کر دیا۔،۔

شان پاکستان آسٹریلیا سڈنی۔ بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق آسٹریلیا Australiaسڈنی Sydneyکے ایک ریسٹورنٹ میں تین خواتین جنہوں نے حجاب بھی پہنا ہوا تھا بیٹھی آپس میں گفتگو میں مشغول تھیں کہ اچانک ایک تینتالیس 43 سالہ شخص ان کی میز پر آ کر تینوں کو دیکھنے کے بعد ان کے حجاب اور مسلمانوں پر تنقید کرتا ہے، خواتین کو ہراساں کرنے کے بعد بھی خواتین مطمئن رہتی ہیں یعنی کہ نظر انداز کرنا چاہتی ہیں جس پراسلامو فوبیا میں مبتلا یہ شخص آپے سے باہر ہو جاتا ہے اور درمیان میں بیٹھی حاملہ خاتون پر حملہ کر دیتا ہے گھونسوں اور لاتوں کی بارش کر کے حاملہ خاتون کو زمین پر گرا کر لاتوں سے کچلنے کی کوشش کرتا ہے جس پر وہاں موجود مرد و خواتین فوراََ اسلامو فوبیا میں مبتلا شخص کو قابو میں کر کے پولیس کے حوالہ کر دیتے ہیں اور زخمی خاتون کو ابتدائی طبی امداد کے لئے اسپتال منتقل کر دیا جاتا ہے، رپورٹ کے مطابق طبی امداد کے بعد حاملہ خاتون کو گھر جانے کی اجازت دے دی جاتی ہے، آسٹریلوی پولیس انسپکٹر کے مطابق آسٹریلیا میں با حجاب مسلم خواتین پر حملوں میں اضافہ ہوتے دیکھا جا سکتا ہے پولیس اپنی پوری کوشش میں ہے کہ ایسے واقعات پر قابو پایا جا سکے۔ یہاں یہ بتانا بھی ضروری ہے کہ نیوزی لینڈ کی مساجد پر حملہ کر کے 50 نمازیوں کو شہید کرنے والا بھی آسٹریلوی شہری تھا۔پولیس نے حملے کو اسلامو فوبک قرار دیتے ہوئے 43 سالہ ملزم کیخلاف جسمانی تشدد اور نفرت آمیز رویے کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کرلیا ہے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے