۔،۔پوری دنیا نے پوشیدہ دشمن کے خلاف اعلان جنگ کر رکھا ہے۔نذر حسین۔،۔


٭زمین تمہارا کچھ نہیں بگاڑ سکتی اگر تمہارا آسمان سے پختہ تعلق ہے٭

شان پاکستانجرمنی فرینکفرٹ۔ پوری دنیا نے پوشیدہ دشمن کے خلاف اعلان جنگ کر رکھا ہے دشمن دیکھتے دیکھتے وار کر جاتا ہے اور آپ کو چند دن بعد معلوم ہوتا ہے کہ پوشیدہ دشمن وار کر کے جا چکا ہے،جرمنی کے صوبہ ہیسن Hessenمیں عوامی زندگی پرCovid-19. کے پھیلنے کے ڈر سے کل سے مزید پابندیاں عائد کی جا رہی ہیں کل بروز ہفتہ سے ہیسن میں تمام ریستوران، قہوہ خانہ اور کافی بار کو انفیکشن کے ڈر سے بند کر دیا جائے گا اور کل سے ہی پانچ لوگوں سے زیادہ کے اکٹھے کھڑے ہونے پر بھی پابندی لگا دی گئی ہے۔ وزیر صحت کلوز Klose. کے مطابق 1.000 رجسٹرڈ متاثر افراد ہیں،ہیسن منسٹر فولکر بوفیئرVolker Bouffier کا کہنا ہے کہ چند افرادغیر ذمہ داری کے مرتکب ہو رہے ہیں جوکرونا پارٹی „Corona-Partys“ کے نام پر دولت کمانے کے چکر میں ہیں۔بروز جمعہ رات 21:44 Uhr بجے تک جرمنی میں متاثرین کی تعداد21,168تک پہنچ چکی تھی روبرٹ کُخ انسٹیٹیوٹ کے مطابق Robert Koch-Institut ابھی تک 58 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ جرمنی اس وقت دنیا میں تیسرے نمبر پر پہنچ چکا ہے۔ چائنا۔متاثرین80,977 اور مرنے والوں کی تعداد 3,249۔اٹلیمیں متاثرین 47,021 جبکہ مرنے والوں کی تعداد 4,032ہے۔ جبکہ پوری دنیا میں 244.600 متاثرین بتائے جاتے ہیں اور مرنے والوں کی تعداد 10.030 تک پہنچ چکی ہے۔ Pharma Statista رائنر راڈکے Rainer Radtkeکے حساب سے جرمنی پانچویں نمبر پر ہے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے