۔،۔ کورونا وائرس سے متاثر کمپنیوں کے لئے کابینہ نے اربوں کی امداد پیکج کافیصلہ کر لیا۔نذر حسین۔،۔

شان پاکستان جرمنی برلن۔ ۔ کورونا وائرس کے بحران سے متاثر بڑی کمپنیاں،چھوٹے کارباری،بے روزگاری الاوُنس۔ کنبے اور اسپتالوں کے لئے کابینہ نے اربوں کی امداد پیکج کافیصلہ کر لیا ، تاریخی اعلان ایک سو 56 یورو امدادی ٹیکج کا اعلان کرتے ہوئے وفاقی وزیر خزانہ اولاف شلز Federal Finance Minister Olaf Scholz,SPD نے کہا کہ ایک بہت بڑے چیلنج اس وائرس وبائی بیماری سے منسلک ہے اس کے باوجود ہم اپنے ملک کو محفوظ بنانے کے قابل ہیں،ہمارے شہریوں کی صحت اور شہریوں کی زندگی، ملک کی معیشت، کام کرنے کی جگہیں،معاشی استحکام کی منصوبہ بندی کے لئے00 6 ارب جس میں سے 400ارب کریڈٹ پروٹیکشن کے لئے،چھوٹے کاروباری افراد خود روزگار self-employedکے لئے مدد ریکارڈrecord highکی رقم 50 بلین یورو وفاقی وزیر معیشت federal minister of economy پیٹر الٹ مائیر۔ Peter Altmaier,CDU اس کے ساتھ ہمیقینی بناتے ہیں، خاص کر کرایہ اور لیز کے ٹھیکے داروں کو کوئی نیا آرڈر اور آمدن نہیں اپنے کاروبار کو بند کرنے کی ضرورت نہیں۔ وہ والدین جو کرونا کرائس کی وجہ سے بچوں کی دیکھ بھال کر رہے ہیں اور مالی مشکلات کا سامنا ہے ان کی بھی مدد ہونی چائیئے۔ وفاقی وزیر برائے خاندانی امور فرانسسکا گفیFranziska Giffey۔Federal Minister of Family Affairs۔ وفاقی حکومت ہنگامی حالات میں بے روز گار الاونس لینے والے کرایہ داروں کو بھی سہولت مہیا کرے گی، ڈاکٹر اسپتالوں میں ایک بیڈ کے لئے جس میں سانس لینے کی سہولتیں میسر ہوں 50 ہزار یورو مہیا کریں گے۔یہ فرمانا تھا وزیر صحت۔جینز سپان Jens Spahn CDU۔ Minister of Health کا ان کا کہنا تھا کہ کرونا مریضوں کی دیکھ بھال کے لئے مزید عملہ میڈیکل اوزارں کے لئے مالی معاوضہ ملتا رہے گا، حکومت کے ترجمان سٹیفن سائیبرٹ Steffen Seibert کے مطابق جرمن چانسلر انجیلا میرکل کا پہلا کرونا ٹیسٹ منفی میں تھا اگلے جند دنوں میں مزید ٹیسٹ ہوں گے تب تک چانسلر قرنطینہ سے ہی کام کریں گیں۔ روبرٹ کوخ انسٹیٹیوٹ کے ڈائریکٹر Dr.Lothar Weiler کا کہنا تھا کہ میں پُر امید ہوں کہ کرونا وائرس کا بڑھنا کچھ کم پڑ گیا ہے اب زیادہ تیزی سے اضافہ نظر نہیں آ رہا۔ شاید بدھ کے دن یقینی طور پر درجہ بندی کر سکوں میں ، حکومت نے بنیادی طور پر دو سے زیادہ افراد کی ملاقاتوں پر پابندی عائد کر دی ہے۔ سوائے ان لوگوں کے جن کے ساتھ آپ رہ رہے ہیں۔ کم از کم2 ہفتوں کے لئے ریستوران،حجام،کاسمیٹک سٹوڈیو،پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ بایرن میں بہت سختی کر دی گئی ہے۔ وفاقی وزیر خارجہfederal foreign minister ہائیکو ماس۔Heiko Mass۔ کا کہنا تھا کہ جرمن حکومت ابھی تک اپنے شہریوں کو دوسرے ممالک سے واپس لانے کی کوشش میں ہے۔ فرانسیسی حکومت کے مطابق چار ٹیسٹ کورونا وائرس کے لئے آخری مرحلہ میں داخل ہو چکے ہیں۔یورپ کے وسیع منصوبہ کے تحت جس میں بلجیئم، فرانس،جرمنی اور والینڈ شامل ہیں کرونا وائرس کے خلاف چار(4)دوائیوں اور ویکسین کی تلاش کر لی ہے جن کی تاثیر کورونا کے خلاف ہے اور وہ دوائیاں اس سے پہلے، ایبولا، ملیریا اور ایڈز کے خلاف بھی استعمال کی جا رہی ہیں کی منظوری بھی مل جائے گی فلحال تجربہ کے طور پر 3200مریضوں پر یہ دوائیاں استعمال کی جا چکی ہیں اور ریزلٹ وثبت ثابت ہوا ہے۔ آج مورخہ 24مارچ 2020دوپہر 13:00 Uhrبجے تک پوری دنیا میں ٹوٹل کیسز 394,160 ہو چکے ہیں جبکہ 17,170اموات بھی ہو چکی ہیں جسن میں سے 196کا حالت نازک بتائی جاتی ہے۔بِسمِ اللّہِ الَّذِ لَا یَضُرُّ مَعَ اسمِہِ شَی ءَُ فِی الَررضِ وَ لَا فِی السَّمَا ءِ وَ ھُوَ الَّمِیعُ العَلِیمُ،پاکستان فلحال۔916 متاثرین کے ساتھ 28 ویں نمبر پر ہے جبکہ مرنے والوں کی تعداد 7 بتائی جاتی ہے۔اللہ تعالی پوری دنیا کے متاثرین کی غیبی مدد عطاء فرمائے(آمین)

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے