۔،۔ جامعہ الازہر کے علماء کی سپریم کونسل نے عالمی وباء کے حوالہ سے باضابطہ فتوی جاری کر دیا۔نذر حسین۔،۔

شان پاکستان مصر۔ ٭شان پاکستان جرمنی کو رپورٹ ملنے کی صورت میں یہ آرٹیکل لکھا جا رہا ہے ابھی تک ہمیں فتوی کی کاپی موصول نہیں ہوئی٭۔رپورٹ کے مطابق یہ فتوی پاکستان کے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے اسلام آباد میں مصر کے سفیر کے ذریعہ شیخ الازہر سے کورونا وائرس کی وباء کے سلسلہ میں مذہبی فرائض کی ادائیگی کے حوالہ سے رہنمائی کی درخواست کی تھی جس کے سلسلہ میں یہ فتوی جاری کیا گیا ہے۔٭ کورونا وائرس کی عالمی وباء Corona Pandemieکے پیش نظر مصر کی ممتاز جامعہ الازہر کے علماء کی سپریم کونسل نے مصدقہ طبی معلومات اور انسانی زندگی کے تحفظ کو مدنظر رکھتے ہوئے نماز باجماعت اور جمعّہ کی نماز کی ادائیگی پر پابندی عائد کرنے کے حوالہ سے باضابطہ فتوی جاری کر دیا۔
جامعہ الازہر کے علماء کی سپریم کونسل نے فتوی میں لکھا ہے کہ۔تمام شواہد واضح طور پر اس امر کی نشاندہی کرتے ہیں کہ عوامی اجتماعات بشمول باجماعت نماز کورونا وائرس ٭Corona Virus Pandemie٭کے پھیلاوُ کا باعث بنتے ہیں۔ مسلمان ممالک میں سرکاری حکام کو باجماعت نماز و جمعہ کی نمازوں کو منسوخ کرنے کا پورا اختیار ہے۔ اس سلسلہ میں درپیش حالات کو مدنظر رکھا جائے، موئزن حضرات کو ٭صلوۃ فی بیوتکم٭گھروں میں نماز ادا کریں ٭ کے ساتھ ترمیم شدہ آذان دینی چاہیئے جبکہ اہلخانہ گھروں میں با جماعت نماز کا اہتمام کر سکتے ہیں،مسلمانوں کے فرائض میں شامل ہے کہ وہ عالمی بحران کی صورت میں طبی احتیاطی تدابیر کے حوالہ سے مجاز ریاستی حکام کے احکامات کی پیروی کریں اور غیر سرکاری ذرائع سے اطلاعات اور افواہوں پر عمل سے گریز کریں۔ فتوی میں مزید کہا گیا ہے کہ حالیہ کرونا وارس کی عالمی وباء تیزی سے پھیلتی جا رہی ہے ان حالات کو مد نظر رکھتے ہوئے انسانی زندگیوں کو بچانا اسلامی قانون کے عظیم مقاصد میں شامل ہے فتوی میں مزید لکھا گیا ہے کہ ٭ابو داوُدنے ابن عباس سے روایت کیا ہے کہ پیغمبر اسلام حضرت محمدﷺ نے فرمایا کہ ٭بیماری کا خوف باجماعت نماز چھوڑنے کے لئے عذر ہے٭اس طرح عبد الرحمن بن عوف نے بیان کیا کہ پیغمبر اسلام حضرت محمدﷺ نے ان لوگوں کو مسجد میں نماز ادا کرنے سے منع فرمایا جو طوسرے لوگوں کے لئے ناگواربدبو کا باعث ہوں تا کہ دوسرے لوگ اس (بد بو) سے محفوظ رہ سکیں، لہاذا ان شواہد کی بناء پر الازہر کے علماء کی سپریم کونسل نے فتوی دیا ہے کہ مسلمان ممالک میں سرکاری حکام کو باجماعت نمازو جمعہ کی نمازوں کو عالمی وباء کے موقع پر منسوخ کرنے کا پورا اختیار ہے۔واللہ عالم۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے