-,- غیرقانونی طریقے سے سرحد پار کرنے والے 331 افراد گرفتار-,-
برطانوی سیکورٹی فورسز کی کارروائیاں، غیرقانونی طریقے سے سرحد پار کرنے والے 331 افراد گرفتار

برطانیہ کی بارڈرسکیورٹی فورسز نے گزشتہ 10یوم کے دوران غیر قانونی طریقے سے سرحد عبور کرنے کی کوشش میں 331افراد کو گرفتار کیا ہے، تازہ ترین کارروائی میں 6کشتیوں پر سوار 90تارکین وطن کو غیر قانونی طو رپر برطانیہ میں داخلے کی کوشش کے دوران حراست میں لے لیا گیا، جن میں تین چھوٹے بچے بھی شامل ہیں، برطانیہ میں لاک ڈائون کے دوران غیر قانونی طریقے سے سرحد عبور کرنیکی کوششوں میں کئی گنا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے، اعدادو شمار کے مطابق بینک ہالیڈے کے اختتام تک کم از کم 227 تارکین وطن برطانیہ میں داخل ہوئے، برطانیہ میں داخلے کی حالیہ کوشش کے دوران غیر قانونی تارکین وطن کشتیوں کے ذریعے داخلے کی کوشش میں پکڑے گئے، سیکیورٹی فورس کے ساحل پر پیٹرولنگ میں مشغول ایک جہاز نے کشی کو روک کر تلاش لی تو اس میں سے 10افراد کا ایک گروپ پکڑا گیا، جنہوں نے اپنا تعلق سوڈان اور لیبیا سے ظاہر کیا، دوسری کشتی میں 12افراد سوار تھے جن کے مطابق وہ شامی ہیں،تیسرے واقعہ میں ایک کشتی سے 14افراد کو گرفتار کیاجو شامی، ایرانی، سینیگالی، عراقی اور یمنی تھے، چوتھی کارروائی میں 21افراد جن میں 4خواتین بھی شامل تھیں کو حراست میں لیا گیا جن کا تعلق عراق اور ایران سے ہے‘ پانچویں کارروائی میں پیٹرولنگ جہاز نے جس کشتی کو پکڑا اس میں گیارہ مردوں سمیت تین خواتین شامل تھیں جن کا تعلق بھی ایران اور افغانستان سے تھا، کورونا وائرس کی وباء سے یورپی ممالک میں ہلاکتوں کا طوفان برپا ہے مگر کشتیوں کے ذریعے برطانیہ میں داخلے کی کوشش کرنیوالے غیر قانونی تارکین وطن نے اس وباء سے بچنے کیلئے کسی قسم کی احتیاطی تدابیر نہیں اپنائیں اور نہ ہی ان کے پاس کوئی طبی سہولیات موجود تھیں، ہوم آفس کے ترجمان نے اس صور تحال پر کہا ہے کہ برطانیہ کے تمام بارڈر مکمل طور پر محفوظ ہیں کسی کو بھی غیر قانونی طریقے سے سرحد عبور کرنے کی اجازت نہیں دینگے اور ایسی تمام کوششوں کی حوصلہ شکنی کی جائے گی،انسانی اسمگلنگ میں ملوث افراد کیخلاف بھی موثر کارروائیاں جاری ہیں، جن میں حالیہ واقعات کے بعد تیزی لائی جا رہی ہے-

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے