۔،۔ امریکی ریاست نیو میکسیکو میں سینی ٹائزر پینے سے تین افراد ہلاک۔،۔

شان پاکستان امریکا نیو میکسیکو۔ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا میں عالمی وبا کورونا نے لوگوں میں خوف و حراس پھیلا دیا امریکا میں ابھی تک 127,973افراد کورونا کی نظر ہو چکے ہیں، اس افرا تفری کے عالم میں خوف میں مبتلا افراد گھریلو ٹوٹکے بھی استعمال کر رہے ہیں رپورٹ کے مطابق گھریلو ٹوٹکوں پر عمل کرتے ہوئے کئی لوگ اپنی زندگی سے ہاتھ دھو بیٹھے، حال ہی میں امریکی ریاست نیو میکسیکو میں 3 افراد نے سینی ٹائزرsanitizer کو کورونا کا علاج سمجھ کر اسے پی لیا شاید اس کی وجہ سے کورونا کے جراثیم اسی سے مریں گے موت کے بعد ان افراد میں میتھانول اور الکوحل کی زیادتی پائی گئی تھی۔ نیو میکسیکو کے محکمہ صحت کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ہبنڈ سینی ٹائزر پینے سے ایک شخص کی بینائی بھی چلی گئی ہے جبکہ 3 کی حالت تشویشناک ہے جو کہ زیر علاج ہیں، اس واقعہ کے بعد محکمہ صحت نے شہریوں کو خبردار کیا کہ سینی ٹائزر کے بے جا استعمال سے گریز کریں اور خصوصی طور پر اسے ہر گز نہ پیئیں۔ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکا کی فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن نے ملک میں زیر استعمال ایک میکسیکن کمپنی کے 9 سینی ٹائزرز کو غیر معیاری قرار دیتے ہوئے ان پر پابندی عائد کردی ہے اور کمپنی کو تمام اسٹاک 17 جون تک واپس اٹھانے کی ہدایت کی ہے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے