۔،۔ بھارت کورونا کے شکار 300 ملین افراد سے خوب زدہ ہے۔نذر حسین-،-

شان پاکستان بھارت دہلی۔ ہندوستان کی آبادی 1,3 بلین سے بھی زیادہ ہے اور زیادہ تر افراد کی حالت تباہ کن بتائی جاتی ہے جبکہ شدید کورونا پھیلنے کے خدشہ کو دیکھتے ہوئے سب سے بڑی ریاست اپنی عوامی زندگی کو تقریباََ مکمل طور پر بند کرنے پر تیار ہے۔ تازہ رپورٹ کے مطابق نئی دہلی کی آبادی تقریباََ 21 ملین سے بھی زیادہ ہے جبکہ کورونا متاثرین کی تعداد 80.188 صحت یاب 49.301 اور مرنے والوں کی تعداد 2.558 بتائی جاتی ہے۔ بھارت میں متاثرین کی تعداد 530,993 سے بھی تجاوز کر چکی ہے، ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ عوام کو قابو کرنا حکومت کے بس میں نہیں اگر دن کو احتیاط برتی جاتی ہے تو شام ہوتے ہی عوام سڑکوں پر اُمڈ پڑتی ہے کوئی سوشل ڈسٹنس کا حیال نہیں رکھتا ایک ہی بوتل یا گلاس میں سے پانی بھی پیا جاتا ہے اکٹھے بیٹھ کرکھانا بھی کھایا جاتا ہے جس کی وجہ سے موت کا آکڑہ بڑھتا نظر آ رہا ہے۔ اسپتالوں میں کوئی جگہ نہیں مریضوں کے لئے گتوں pap carton سے ہال بنائے جا رہے ہیں، بے کار کھڑی کارگو ٹرینوں میں مریضوں کو لٹانے کی جگہیں بنائی جا رہی ہیں اگر حالات پر قابو نہ پایا گیا تو بھارت دنیا میں عالمی مرض کورونا کووڈ 19 کاگڑھ بن جائے گا۔ ایک رپورٹ کےمطابق حکومت کےنمائندےگھرگھرجاکرمتاثرین کی مددکرنےپرمامورکردیئےگئےہیں۔ایک رپورٹ کے مطابق اگر حالات پر قابو نہ پایا گیا تو متاثرین کی تعدا د 300 ملین تک پہنچ سکتی ہے-

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے