۔،۔ خصوصی افراد کی اہلیت اورقابلیت کوانڈراسٹمیٹ نہ کیا جائے:کامران بازئی۔،۔
خصو صی افراد کوان کی قابلیت اوراہلیت کے مطابق سرکاری اداروں میں باعزت اورجائزمقام دیاجائے
وفاقی اورصوبائی حکومتیں خصوصی افرادکیلئے ایساماحول فراہم کریں جہاں ان کی پوشیدہ صلاحتیں اجاگرہوں

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ بلوچستان کے صوبائی صدر کامران خان بازئی نے کہا ہے کہ خصوصی افراد کی اہلیت اورقابلیت کوانڈراسٹمیٹ نہ کیا جائے،انہوں نے زندگی کے ہرشعبہ میں اپنی صلاحیتوں کالوہامنوایا ہے۔خصوصی افراد کوان کی قابلیت اوراہلیت کے مطابق سرکاری اداروں میں باعزت اورجائزمقام دیاجائے۔وفاقی اورصوبائی حکومتیں خصوصی افرادکیلئے ایساماحول فراہم کریں جہاں ان کی پوشیدہ صلاحتیں اجاگرہوں کیونکہ یہ بھی نارمل انسانوں کی طرح خدادادصلاحیتوں کے حامل ہیں۔قومی وسائل کاپانچ فیصد خصوصی افرادکی ویلفیئر کیلئے مختص کیا جائے۔ وہ ایک اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔ کامران خان بازئی نے مزید کہا کہ ہمارے ہاں خصوصی افراد کوان کے بنیادی حقوق سے محروم رکھنا اورانہیں بوجھ سمجھنا عام بات ہے،اس روش کاتدارک ناگزیر ہے۔خصوصی افرادکواپنے روزمرہ کے امورخودانجام دینے کے قابل بنایاجاسکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ جس معاشرے میں اداکاروں اورگلوکاروں کوتوباقاعدگی کے ساتھ امدادی رقوم فراہم کی جائیں اورانہیں ایوارڈوں سے نوازاجائے مگر خصوصی افراد کوان کی جائزضروریات تک نہ ملیں تو وہ مایوس اوردلبرداشتہ ہوجاتے ہیں۔خصوصی افراد کی زندگی میں آسانیاں پیداکرنے کیلئے نصاب تعلیم اورمیڈیاکی مددسے خصوصی مہم شروع کی جائے۔انہوں نے کہا کہ خصوصی افرادکی خدمت کرنابلاشبہ عبادت کے زمرے میں آتی ہے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے