۔،۔ ٹرین کے اندر چیکنگ کرنے والے جعلسازوں سے دو چار ہیں۔،۔

شان پاکستان۔ جعلساز گروہ صوبہ ہیسن میں خریدے ہوئے ٹکٹوں پر جعلسازی کرنے کے بعد دوبارہ فروخت کرنے میں مصروف، جعلساز گروپ ٹرین کے عملے پر بری طرح سے حملہ کرنے سے بھی دریغ نہیں کرتے۔ ریناٹ مولر Renate Muller٭نام تبدیل کیا گیا٭ کے مطابق وہ ٹرین میں ٹکٹ چیک کرنے پر مامور ہے ان کا کہنا ہے کہ فرینکفرٹ Frankfurt اور کاسلKassel کے درمیان دھوکہ دہی کے گروہ کا نشانہ بن چکی ہیں ٹکٹ چیک کرنے پر ان کو دھمکیاں،توہین یہاں تک کہ جسمانی حملوں کا بھی سامنا کرنا پڑا ، ہیسن گروپ ٹکٹ کے بارے میں تنازعات ہمیشہ ہی مسئلہ بنے رہے، ان کا مزید کہنا تھا کہ جب میں ٹرین میں ٹکٹ چیک کرتی ہوں تو وہ میرے سامنے کھڑے ہو کر مجھ پر تھوکتے ہیں اور میرے سر کے قریب دیوار پر مکے برسانے کا مظاہرہ کر کے مجھے ہراساں کرتے ہیں تا کہ میں ڈر جاوُں۔ دھوکہ دہی کرنے والے گروہ ہیسن ٹکٹ کی سیٹیں کئی بار دوبارہ بیچ دیتے ہیں ان پر لکھے نام مٹا کر دوسرے ناموں کا اندراج کرنے کے بعد دوبارہ فروخت کر دی جاتی ہیں۔ 36 یورو کی ٹکٹ صرف ایک دن کے لئے ہوتی ہے آپ اس ٹکٹ سے جرمنی کے ایک کونے سے دوسرے کونے تک سفر کر سکتے ہیں اس ٹکٹ پر پانچ آدمی ایک ساتھ سفر کر سکتے ہیں۔ ریناٹ کا کہنا تھا کہ بعض دفعہ نام لکھنے کے بعد ان کو مٹا کر کئی بار ٹکٹ استعمال کرنے والوں کے پاس چاقو یا مرچوں والی سپرے بھی ہوتی ہے وہ استعمال کرنے سے گریز نہیں کرتے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے