۔،۔ پاکستانیوں کومتحد کرنیوالی قیادت کہاں ہے: سلمان پرویز۔،۔
اقتدار کیلئے اے پی سی منعقدکرنیوالے عوام کیلئے کوئی اجتماع کیوں نہیں کرتے

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی سینئر نائب صدر سلمان پرویز نے کہا ہے کہ پاکستانیوں کومتحد کرنیوالی قیادت کہاں ہے۔اقتدار کیلئے اے پی سی منعقدکرنیوالے عوام کیلئے کوئی اجتماع کیوں نہیں کرتے۔حکومت اوراپوزیشن دونوں فریق اپنے منفی کردارسے عوام کومایوس کررہے ہیں۔ غداروں نے بھارتی آشیربادسے پاکستان کابٹوارہ کیاتھا۔ 1971ء میں نفرت اورنفاق نے ہمارا ملک توڑاتھا،بھارت آج بھی گھات لگائے بیٹھا ہے۔ پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان حالیہ اعلیٰ سطحی رابطے خوش آئند ہیں۔ بھارت نے ہردور میں انسانی حقوق کی دھجیاں بکھیر یں مگرمقتدرقوتیں ہربار خاموش ر ہیں۔ پاکستان میں نیاصوبہ بنانے کاشوشہ درحقیقت قومی یکجہتی کیخلاف سازش ہے۔کیاجنوبی پنجاب کوصوبہ بنانے کے حامیوں نے وسائل کابندوبست کرلیا ہے۔پاکستان سے محبت کرنیوالے اس کی بقاء کیلئے متحد ہوکراپنامستعدکرداراداکریں۔اپنے ایک بیان میں سلمان پرویز نے مزید کہا کہ اُدھر تم اِدھرہم کی بنیادپر پاکستان کابٹوارہ کر نے کے باوجود ہمارے حکمران طبقات کی سوچ اورسیاست میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔ منافرت،منافقت،صوبائیت اورتعصبات کادیمک ریاست کی بنیادوں کوچاٹ رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ خداراپاکستان کوتختہ مشق اورغیورعوام کوبھکاری نہ بنایا جائے۔انہوں نے کہا کہ جہاں عوام کوایڑیاں رگڑنے کے باوجودان کے بنیادی حقوق نہ ملیں وہاں اقدارکاجنازہ اٹھ جاتا ہے۔ پاکستان کاہر دوسرا سیاستدان اقتدارکاخواہاں ہے مگراقدارکی بات کوئی نہیں کرتا۔انہوں نے کہا کہ آج بھی بیرونی قوتوں کے تنخواہ دار ایجنٹ پاکستانیت کیخلاف سرگرم ہیں اوراس مافیا نے ہماری نسل کااخلاق بگاڑنے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی۔ اقتدارپرست سیاستدان ملک اورعوام پررحم کریں،ایک دوسرے کوسیاسی طورپرپچھاڑنے کی بجائے ملک بچانے کی تدبیر کی جائے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے