۔،۔ ملک میں تبدیلی اعلانات نہیں اقدامات سے آئے گی:رمضان رضی خان۔،۔
انتقام کے بل پرنظام نہیں بدلے گا،انتقامی سیاست ریاست کوراس نہیں آتی

لاہور( )تحریک دفاع پاکستان کے مرکزی چیئرمین جمیل رمضان خان رضی نے کہا ہے کہ ملک میں تبدیلی اعلانات نہیں ٹھوس اوردوررس اقدامات سے آئے گی۔حکمران ڈینگیں نہیں ڈینگی مچھر ماریں۔عمران خان نے جس تبدیلی کے نام پراقتدار ہتھیایا وہ دوبرسوں میں آئی نہ آئندہ آئے گی کیونکہ ان میں نظام تبدیل کرنے کی صلاحیت نہیں ہے۔ حکمران یادرکھیں انتقام کے بل پرنظام نہیں بد لے گا،انتقامی سیاست ریاست اورقومی معیشت کوراس نہیں آتی۔پی ٹی آئی،پیپلزپارٹی اورمسلم لیگ (ن) کے طرز سیاست میں کوئی فرق نہیں۔تینوں پارٹیوں کے اندر جمہوریت نہیں بادشاہت ہے،بلاول زرداری کوایک پرچی پر چیئرمین جبکہ ناتجربہ کار عمران خان کومحض بلندبانگ دعوؤں کی بنیادپروزیراعظم بنادیا گیا۔حکمرانوں نے بیانات کی حدتک توپاکستان کوجنت نظیر اورریاست مدینہ ثانی بنادیالیکن حقیقت بہت مختلف اورخوفناک ہے۔ اپنے ایک بیان میں جمیل رمضان خان رضی نے مزید کہا کہ ریاست کو سنجیدہ وتعمیری سیاست اورمدبرقیادت کی ضرورت ہے۔ جس طرح ہم دبنگ انداز سے عوامی ایشوزپربات کرتے ہیں اس طرح دوسرا کوئی سیاستدان نہیں کرتا۔انہوں نے کہا کہ ہماری سرگرمیوں کامحورریاستی ادارے اور ریاست کے قومی مفادات ہیں،چاردہائیوں کے دوران باری باری اقتدارمیں آنیوالے چہروں نے عوام کوبیوقوف بنایا۔حکمرانوں اوراپوزیشن کے حامی سیاستدانوں کوبلیم گیم کے سواکچھ نہیں آتا۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی،مسلم لیگ (ن) اورپیپلزپارٹی اپنی سیاسی کارکردگی کوایک نظردیکھیں اورشرم سے ڈوب مریں۔حکمران پارٹیوں کے لوگ کرپشن میں لتھڑے ہوئے ہیں،یہ پاکستانیوں کوریلیف نہیں دے سکتے۔انہوں نے کہا کہ پنجاب کے صوبائی وزیراطلاعات کے مطابق،وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کووزیراعظم عمران خان کااعتماد حاصل ہے لیکن یہ دونوں شخصیات عوام کے اعتماد سے محروم ہیں۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے