۔،۔ ماسک سے انکار کرنے والوں کو عجیب و غریب سزا۔کورونا سے مرنے والوں کی قبریں کھودیں۔نذر حسین۔،۔

شان پاکستان انڈونیشیا۔ جکارتا پوسٹ کے مطابق انڈونیشیا میں ماسک سے سے انکار کرنے والوں کے لئے غیر معمولی جرمانوں کا انتخاب کیا گیا ہے ان میں سے کچھ کو کورونا Covid-19- سے مرنے والوں کی قبریں کھونی پڑتی ہیں اس سے قبرستان کے گورکن کو بھی مدد مل جاتی ہے۔دنیا کے دوسرے ممالک کی طرح انڈونیشیا میں بھی ماسک بہت بڑا مسئلہ بن چکا ہے کورونا کے پھیلاوُ کے خلاف احتیاطی تدابیر کے طور پر ماسک کی ضرورت متعارف کرائی گئی لیکن کچھ نا اہل افراد منہ اور ناک سے بچنے سے انکار کرتے ہیں جبکہ باقی دنیا میں حکام عام طور پر جرمانے کے ساتھ رد عمل ظاہر کرتے ہیں جبکہ انڈونیشیا میں لوگ تخلیقی ہوتے ہیں۔جیسا کہ ماسک سے انکار اور نہ پہننے پر عوام کے سامنے سر عام ایک منٹ کے لئے پش اپ(بیٹھکیں لگانا) پڑتی ہیں، دوسرا ایک اور سزا کے طور پر تابوت میں ایک منٹ تک لیٹنا پڑتا ہے یا پھر جو ماسک پہننے سے انکار کرتا ہے اس سے سخت سزا کوویڈ Covid-19 سے مرنے والوں کی قبریں کھودنی پڑتی ہیں۔رپورٹ کے مطابق مقامی قبرستان میں عملے کی کمی ہونے کی وجہ سے قبرستان کے انچارچ کے مطابق آٹھ افراد کو سزا سنائی گئی تھی تا کہ وہ گورکن کی مدد کر سکیں سپریم کے ضلعی سربراہ گریسک Gresik کا کہنا تھا کہ میں نے سوچا کہ یہ لوگ گورکن کی مدد کر سکتے ہیں اور اس سزا کے بعد ماسک پہننے کی پابندی بھی کریں گے۔ واضح رہے کہ پچھلے دنوں سے انڈونیشیا میں کورونا کیسز کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہوتے ہوئے دیکھ جا سکتا ہے۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے