-, -قلم کاروان،اسلام آباد(لوح و قلم تیرے ہیں) ڈاکٹرساجدخاکوانی -,-

منگل 22 ستمبر بعد نمازمغرب قلم کاروان کی ہفت روزہ ادبی نشست اسلام آبادمیں منعقدہوئی۔ پیش نامے کے مطابق آج کی نشست میں نوجوان شاعر،ادیب اور ادبی تنظیم”سوچ راولپنڈی“کے نائب صدر جناب محمداکبرخان نیازی کامضمون ”امن عالم؛سعی و جستجو“ طے تھا۔آج کی نشست ۱۲ستمبربین الاقومی یوم امن کے حوالے سے تھی۔ جناب پروفیسرڈاکٹرحافظ محمدفاروق، صدر مدرس اسلام آباد ماڈل کالج برائے طلبہ ایف گیارہ، نے صدارت کی۔جناب طارق سہیل بھٹی نے تلاوت قرآن مجید،جناب ڈاکٹرمرتضی مغل نے مطالعہ حدیث نبویﷺ،جناب سلطان محمودشاہین نے منقبت امام عالی مقام اورجناب میرافسرامان نے گزشتہ نشست کی کارروائی پڑھ کرسنائی۔صدرمجلس کی اجازت سے جناب محمداکبرخان نیازی نے اپنی تحریرپیش کی،تحریر میں امن عالم کی ضرورت و اہمیت کے بعدبتایاگیاتھاکہ عالمی امن کے ٹھیکیدارہی امن عالم کے ساتھ دشمنی کاحق اداکررہے ہیں،انہوں نے خاص طورپر مسلمانوں پر عرصہ حیات تنگ کرنے اور مسلم ممالک کے امن کو جنگ وجدل میں تبدیل کرنے کو ہدف تنقید بنایا،انہوں نے عالمی امن کے ذمہ داراداروں کو عالمی طاقتوں کاامن دشمن ہتھیار بھی قراردیا۔شرکاء میں سے سلطان محمود شاہین،میرافسرامان اورشہزادمنیراحمدنے صاحب مضمون سے سوالات بھی کیے جن کا جواب مرحمت کردیاگیا۔مضمون پر تبصرہ کرتے ہوئے جناب ساجد حسین ملک نے کہاکہ تصاویرمیں امن کی فاختہ کی چونچ میں زیتون کی جوڈالی دکھائی جاتی ہے وہ حضرت نوح علیہ السلام سے منقول یہ روایت ہے کہ انہوں نے خشکی کاپتہ لگانے کے لیے فاختہ کو بھیجاتھاجوزیتون کی ایک شاخ لیے واپس آئی تھی۔پروفیسرآفتاب حیات نے کہاکہ انسانی تاریخ جنگ و جدل اور ظلم و ستم سے بھری پڑی ہے جبکہ انبیاء علیھم السلام نے امن کا درس دیا۔ڈاکٹرمرتضی مغل نے بتایا کہ قرآن مجیدمیں قتل و غارت گری کی سخت سزا بیان کی گئی ہے،انہوں نے قرآن مجید کی متعدد آیات اور احادیث نبویﷺبیان کر کے ثابت کیاکہ دنیامیں امن کی ضامن صرف قرآن مجید کی تعلیمات ہی ہیں۔جناب عالی بنگش نے کہاکہ امام عالی مقام کی ساری جدوجہد قیام امن کے لیے تھی۔سیدمظہرمسعود نے کہا یہودونصاری چونکہ اس دنیامیں فسادکاباعث ہیں تو شایداس لیے ہی ان کے بارے میں کہاگیاکہ وہ مسلمانوں کے دوست نہیں ہو سکتے۔جناب میرافسرامان نے مقالے کے اختصار کاذکرکیا اور کہاکہ بہت زیادہ مواد بہت تھوڑے صفحات میں سمیٹاگیاہے۔جناب شہزادمنیراحمد نے کہا طاقت ہی امن کی ضمانت ہو سکتی ہے۔معمول کے سلسلوں میں جناب شہزادعالم صدیقی نے مثنوی مولائے روم سے اپناحاصل مطالعہ پیش کیا اور جناب عبدالرازق عاقل نے اپنی غزل اور محمداکبرخان نیازی صاحب مضمون نے امن عالم پر اپنے چنیدہ اشعار پیش کیے اور شرکاء سے داد وصول کی۔آخرمیں صدر مجلس جناب پروفیسرڈاکٹرحافظ محمدفاروق نے قرآن مجید کی سورہ قریش کی تلاوت کر کے بتایا کہ جب امن ملے تواللہ تعالی کاشکراوراسکی عبادت کرنی چاہیے،انہوں نے صاحب مضمون کے اسلوب تحریر کی تعریف کی اور تبصرہ نگاروں سے اتفاق کرتے ہوئے بتایاکہ مسلمان جاگے گا تب ہی دنیامیں امن قائم ہو سکے گا،انہوں نے کہاکہ موجودہ ظلم پر مبنی نظام امن کے قیام میں ماضی کی طرح آئندہ بھی ناکام رہے گا،انہوں نے برموقع اس تقریب کے انعقاد پر قلم کاروان کے ذمہ داران کو مبارک بھی دی۔صدارتی خطبے کے بعد جناب سلطان محمود شاہین نے کمانڈرمحمود اقبال کے مرحوم بھائی کے لیے فاتحہ خوانی کروائی اوراس کے ساتھ ہی آج کی ادبی نشست اختتام پزیر ہو گئی۔

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے