-,-کورونا وبا کے دوران 50 سال سے زائد عمر لوگوں میں بیروزگاری بے حد بڑھ گئی-,-

وبا کے دوران 50سال سیزائد عمر لوگوں میں بیروزگاری بے حد بڑھ گئی۔ایک نئی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پچھلے سال پچاس سال سے زائد عمر کے لوگوں میں بیروزگاری کی شرح میں اضافہ ہوا ہے، جس کی وجہ سے اس عمر کے گروپ کی حمایت کے مطالبات بڑھے ہیں۔پچھلے نومبر اور جنوری 2021 کے درمیان زائد 50 سال عمرکی107000 افرادد بے کار ہوگئے – جو کہ ایک سال میں 70500 یا 195 فیصد زیادہ ہے۔ریسٹ لیس نے جو کہ برطانیہ میں زائد عمر لوگوں کو مشورے اور مدد فراہم کرتی ہے، اس نے کہا ہے کہ اضافی ملازمینکی سطح میںکمی ہوئی ہے لیکن وہ 50 سال سے زائد عمرلوگوں میں سست رفتاری سے کم ہوئی۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ 50 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کو فالتو قرار دینے کی شرح اب دوسرے تمام عمر گروپوں کے مقابلہ میں زیادہ ہے، یہ فی ہزار پر 12.8 فیصد ہے۔ریسٹ لیس نے کہا کہ اس کے مطالعے سے یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ فروری 2021 کے آخر تک فرلاگ پر50 سال سے زیادہ عمر لوگوں کی تعداد ایک اندازے کے مطابق 1.3 ملین سے زیادہ تھی جو کہ مجموعی افرادی قوت 4.65 ملین کا 28٪فیصد تھی۔یہ بات ہم سب کے لئے باعث تشویش ہے، کیونکہ پچھلی تحقیق سے یہ بات سامنے آچکی ہے کہ ایک بار بے روزگار ہوجانے پر، 50 سال سے زیادہ عمر کے مزدورں میں عمر کے امتیازی سلوک کی وجہ سے اپنے چھوٹے ہم منصبوں کے مقابلے میں طویل مدتی بے روزگاری میں ڈھل جانے کا زیادہ امکان ہوتا ہیں-

ایڈیٹرچیف نذر حسین کی زیر نگرانی آپ کی خدمت میں پیش ہے