۔،۔ سویڈن میں داعش تنظیم سے وابسطہ سویڈش شہری اسامہ کریم کے خلاف عدالتی کاروائی کا آغاز۔،۔

٭میں سویڈن کے حکام سے مطالبہ کرتا ہوں کہ اسامہ کریم کو اسی طرح جلایا جائے جیسے اس نے میرے بیٹے کو جلایا تھا٭

شان پاکستان سویڈن۔ سویڈن کی عدالت میں گذشتہ روز داعش تنظیم سے وابستہ سویڈش شہری اسامو کریم کے خلاف عدالتی کاروائی کا آغاز ہوا، اسامہ کریم 2015 میں پیش آنے والے اندو ناک واقعہ جس میں داعش تنظیم کے ہاتھوں ایک پنجرے میں اردن کی فضائیہ کے نوجوان پائلٹ معاذ الکساسبہ کو زندہ جلانے کی کاروائی میں شریک تھا، معاذ کے والد یوسف الکسا سبہ کا کہنا ہے کہ جب بھی ہمارے دلوں میں بیٹے کی زندہ جلائے جانے کی آگ ٹھنڈی ہونے لگتی ہے وہ ایک بار پھر سے بھڑک اُٹھتی ہے اور ایسا محسوس ہوتا ہے کہ میرے بیٹے معاذ کو آج جلایا گیا ہے میں جب بھی گرفتار ہونے والے اسامو کریم کے خلاف عدالتی کاروائی سنتا ہوں تو اس حوالہ سے منتظر رہتا ہوں کہ اردن کی حکومت کیا قدم اٹھائے گی یا اس کا رد عمل کیا ہو گا، ان کا مزید کہنا تھا کہ میں بین الاقوامی قانون اردن کو یو حق دیتا ہوں کہ وہ ان کے بیٹے کو زندہ جلائے جانے میں شریک ہو فرد کو طلب کرے اور اردن کی زمین پر اس کے خلاف عدالتی کاروائی عمل مفں لائی جائے اس لئے کہ معاذ الکسا سبہ کا تعلق اردن سے تھا اور ہے۔ واضح رہے سویڈن کی عدلیہ کی جانب سے شام میں مرتکب جنگی جرائم کے حوالہ سے تحقیقات کا آغاز کیا گیا تھا جبکہ داعش تنظیم کے لوگوں نے معاذ کو شام میں ہی پنجرے میں بند کر کے زندہ جلا دیا تھا۔