۔،۔ بھارت کاانتقام اسے ماتم کے مقام پرلے آیا:جمیل رمضان رضی۔،۔
بھارت کی افغانستان میں سرمایہ کاری کے باوجودسیاسی بے کاری مودی کامقدربن گئی

تحریک دفاع پاکستان کے مرکزی چیئرمین جمیل رمضان خان رضی نے کہا ہے کہ بھارت کا انتقام اسے ماتم کے مقام پرلے آیا۔بھارت کی افغانستان میں بڑے پیمانے پرسرمایہ کاری اورریاکاری کے باوجود سیاسی بے کاری مودی سرکار کامقدر بن گئی۔افواج پاکستان کے ہوتے ہوئے ہماری امن پسند ریاست کو دنیا کی کوئی طاقت مرعوب نہیں کرسکتی۔مودی سرکار اور بھارتی میڈیا کے ماتم سے پاکستان کی صحت پرکوئی فرق نہیں پڑتا۔بار بار مذاکرات سے راہ فراراختیارکرنا بھارت کاٹریڈ مارک اورٹریک ریکارڈ ہے۔یقینااب بھی بھارت کے انتہاپسندہندوؤں کو خطہ میں پائیدار امن وامان کیلئے پاکستان کے ساتھ برابری اوربردباری کی بنیادپر مذاکرات گوارہ نہیں۔ مودی سرکاراپنی اتحادی آر ایس ایس کا دباؤمسترد اورجموں وکشمیر کی آئینی حیثیت بحال کرتے ہوئے پاکستان کیخلاف جارحیت کی بجائے بات چیت کاراستہ اختیارکرے۔ اپنے ایک بیان میں جمیل رمضان خان رضی نے مزید کہا کہ پاک بھارت وزرائے اعظم کے درمیان تنازعہ کشمیرکے پرامن حل کیلئے براہ راست رابطہ ہونے سے کشیدگی میں خاطرخواہ کمی آئے گی۔ایک بات طے ہے دونوں ملک کشت وخون کے متحمل نہیں ہوسکتے۔سنجیدہ طبقات اقوام متحدہ کی قرادادوں کے مطابق کشمیر میں استصواب رائے کے خواہاں ہیں۔ پاکستان کی نیک نیتی پرشبہ اور دفاعی صلاحیت کوچیلنج نہ کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں سرگرم دہشت گرد اس مملکت خدادادکوکمزورکرنے کے درپے ہیں، ان کامقابلہ اورانہیں شکست سے دوچارکرنے کیلئے ہماری صفوں میں اتحادویکجہتی ناگزیر ہے۔ پاکستان کے مستعد دفاعی اداروں نے پاک سرزمین سے دہشت گردوں کے ناپاک وجود کاصفایاکردیا، وہ آئندہ بھی اندرونی وبیرونی دشمنوں کاناطقہ بند کردیں گے۔انہوں نے کہا کہ دودہائیوں کاگندراتوں رات صاف نہیں ہوسکتا،عجلت میں کچھ نہیں ہوگا۔قوم نے ہرمرحلے پر دفاعی قیادت اوراپنے پروفیشنل دفاعی ادارں پر اظہار اعتماد کیا،ہماری سکیورٹی فورسز عوام کی توقعات پرضرورپورااتریں گی۔