۔،۔ بیروزگار ی اورمہنگائی کابحران شدیدتر ہوگیا: سلطان حسن بٹ۔،۔
٭ حکمرانوں نے عوامی مسائل کاسدباب کرنے کی بجائے انہیں مزید پیچیدہ بنادیا٭

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی سینئر وائس چیئرمین سلطان حسن بٹ نے کہا ہے کہ بیروزگاری اورمہنگائی کابحران شدید تر ہوگیا۔اتحادی حکومت کے ہاتھوں بدانتظامی بدترین انتقامی سیاست کاشاخسانہ ہے۔ لوگ ایمپورٹڈ حکمرانوں سے بیزارہوگئے ہیں۔حکمرانوں نے عوام کودرپیش مسائل کاسدباب کرنے کی بجائے انہیں مزید پیچیدہ بنادیا۔جہاں شہریوں کوباعزت روزگاراوربروقت انصاف نہیں ملتاوہاں لوگ تاریک راہوں پرچل پڑتے ہیں۔جہاں ریاست شہریوں کے بنیادی حقوق اورضروریات کا خیال نہیں رکھتی وہاں طرح طرح کے بحران پیدا ہوتے ہیں۔ریاست شہریوں کوخودکفیل بنائے،شہریوں کے نجی کاروبار سے قومی معیشت کواستحکام ملے گا۔وہ ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ سلطان حسن بٹ نے مزید کہا کہ بدعنوانی اورنااہلی سے زیادہ بدنیتی اوربدانتظامی پاکستان کی سا لمیت اورقومی مفادات کیلئے زہرقاتل ہے۔جس دن حکمرانوں کی نیت درست ہوگی اس دن ہمارا ملک سنبھل اورسنور جائے گا۔انہوں نے کہا کہ اگرحکمران طبقہ پیسے کو ملک وقوم کی امانت سمجھتاتویہ وقت نہ دیکھنا پڑتا، قومی وسائل کا ضیاع کرپشن سے بڑی کرپشن ہے۔ حکومت کی ناقص داخلی،خارجی، معاشی اورسفارتی ترجیحات نے پاکستان کوبحرانستا ن بنادیا۔ اتحادی حکومت کی کارکردگی ایک بڑاسوالیہ نشان ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستانیوں پرشدیدظلم ہورہے ہیں، ہم ان کے حقوق کیلئے آوازاٹھاتے رہیں گے۔ عوام کوبااختیاربنانے کیلئے فوری انتخابی اصلاحات کاآغازکیاجائے۔انہوں نے کہا کہ امریکہ کے چنگل سے فوری طورپر نکلنا اوربرابری کی بنیادپرروس سمیت نئے دوست بناناپاکستان کی بقاء کیلئے مفیدرہے گا۔ دنیا میں طاقت کاتوازن بحال کرنے کیلئے روس کوسہارادیا جائے۔ واشنگٹن اوردہلی کے ساتھ دوٹوک بات کرنے کاوقت آگیا۔پاکستان کاوقاربحال جبکہ قومی بحران ختم کرنے کیلئے زمینی حقائق سے مطابقت رکھنے والی دوررس پالیسیاں بناناہوں گی۔